عمران خان کی حکومت کو مشروط مذاکرات کی پیش کش

لاہور: تحریک انصاف کے چئیرمین عمران خان نے حکومت کو مشروط مذاکرات کی پیش کش کردی اور کہا ہے کہ حکومت عام انتخابات کی تاریخ دے ورنہ اسمبلیاں توڑ دیں گے۔

اپنے بیان میں عمران خان نے کہا کہ (ق) لیگ مکمل طور پر ہمارے ساتھ کھڑی ہے جو ہمیں پنجاب اسمبلی تحلیل کرنے کا یقین دلاچکی ہے، جیسے ہی میں کہوں گا پرویز الہیٰ اسمبلی تحلیل کر دیں گے۔

یہ بھی پڑھیں:   پہلے بوگی میں لگے پنکھے سے دھواں نکلا اور پھر پنکھا نیچے گرا مسافروں نے آگ لگنے سے قبل ہی چلتی ٹرین سے چھلانگیں کیوں لگائی؟ جلنے والی بوگی میں موجود زندہ بچ جانے والے شخص نے سارا قصہ سنا دیا

عمران خان نے کہا کہ اسمبلیاں تحلیل ہونے کے نتیجے میں ملک بھر میں 66 فیصد نشستوں پر انتخابات ہوں گے، آپ چاہتے کہ ملک کے 66 فیصد حصے میں الیکشن ہوں اور آپ وفاق میں بیٹھے رہیں؟ انہیں ڈر ہے کہ جیسے ہی الیکشن ہوگا انہیں پٹ جانا ہے، ان کا پلان ہے کہ کسی طرح مجھے نااہل کریں اور جیل میں ڈالیں، انہوں نے نیب سے اپنے سارے کیسز ختم کر دیے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:   صدارتی نظام مستحکم سسٹم ہے،عمران خان

ان کا کہنا تھا کہ ہماری معاشی حالت خراب ہے، اگر ہم ڈیفالٹ کرگئے تو پاکستان کی نیشنل سیکیورٹی خطرے میں پڑ جائے گی، سات ماہ میں انہوں نے ملک کے ساتھ جو کیا کوئی دشمن بھی نہ کرے، 17 سال میں ہماری گروتھ سب سے زیادہ تھی لیکن اب ملک کا برا حال ہے۔