امریکا اور طالبان کے درمیان معاہدے کا جائزہ لیا جارہا ہے، امریکہ

Spread the love

واشنگٹن: امریکی وزیر دفاع لائڈ آسٹن کا کہنا ہے کہ افغانستان سے فوجی انخلا میں کسی صورت جلد بازی نہیں کی جائے گی۔

نیٹو کی تقریب سے خطاب کے دوران امریکی وزیر دفاع لائڈ آسٹن کا کہنا تھا کہ افغانستان سے کسی بھی صورت جلد بازی میں فوج کا انخلا مکمل نہیں کیا جائے گا، امریکا اور طالبان کے درمیان ہونے والے امن معاہدے کا باریک بینی سے جائزہ لیا جارہا ہے اور اس بات کویقینی بنایا جارہا ہے کہ فریقین معاہدے کی تمام شرائط کو تسلیم کرتے ہیں کہ نہیں۔

یہ بھی پڑھیں:   امریکہ انتخابات، جوبائیڈن 264 الیکٹورل ووٹ لیکر ٹرمپ سے آگے

امریکی وزیر دفاع نے افغانستان میں فوجی انخلا سے متعلق تمام اتحادیوں کو مشاورت کی یقین دہانی کراتے ہوئے کہا کہ امریکا بغیر کسی منظم طریقے یا جلد بازی میں افغانستان سے افواج واپس نہیں بلائے گا۔

واضح رہے کہ گزشتہ سال طالبان اور امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے درمیان امن معاہدہ ہوا تھا جس کے تحت امریکا نے مئی 2021 تک تمام غیر ملکی افواج واپس بلانی تھیں تاہم جو بائیڈن انتظامیہ نے طالبان پر امن معاہدے کی شرائط پر عمل نہ کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا تھا کہ معاہدہ کا ازسرنو جائزہ لیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں:   عراق، داعش کیخلاف آپریشن میں 2 امریکی فوجی ہلاک