خیبرپختونخوا میں سیلز ٹیکس میں کمی

Spread the love

پشاور: خیبرپختونخوا حکومت نے مختلف شعبہ جات پر سیلز ٹیکس کی شرح میں نمایاں کمی کردی۔

خیبر پختونخوا ریونیو اتھارٹی( کیپرا) نے اعلامیہ میں کہا کہ صوبے میں خدمات کی فراہمی سے وابستہ کل 29 شعبہ جات پر سیلز ٹیکس کی شرح میں زبردست کمی لائی گئی ہے۔ خدمات کے شعبے سے وابستہ 10 شعبہ جات پر سیلز ٹیکس کی شرح کو 15 سے کم کرکے صرف 2 فیصد کر دیا گیا، 5 شعبہ جات پر ٹیکس کو 15 سے کم کرکے 5 فیصد، 6 شعبوں پر ٹیکس 15 سے کم کرکے 10 اور 8 فیصد کر دیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں:   قیمتوں کا بحران کم کرنے کیلیے ایران سے ٹماٹر درآمد کے سودے طے

ڈی جی کیپرا فیاض علی شاہ نے بتایا کہ چھوٹے اور درمیانے درجے کے ہوٹل، ریسٹورنٹ، سرائے اور مہمان خانوں پر سیلز ٹیکس 15 سے کم کرکے 8 فیصد کر دیا گیا۔ ریسٹورنٹ انوائس منیجمنٹ سسٹم استعمال کرنے والے ہوٹلوں پر سیلز ٹیکس کی شرح 5 فیصد ہوگی، ہوائی اڈوں، ڈرائی پورٹس، کنٹینر ٹرمینل اور گودام وغیرہ پر ٹیکس کو 15 سے کم کرکے 10 فیصد، سڑک کنارے کام کرنے والے مستری خانوں پر ٹیکس کی شرح 5 سے کم کرکے 2 فیصد کر دی گئی ہے.

یہ بھی پڑھیں:   پی آئی اے کا کرایوں میں کمی کا اعلان

صنعتی ورکشاپ کی خدمات پر ٹیکس کو 10 سے کم کرکے 5 فیصد کر دیا گیا جبکہ بیوٹی پارلرز پر ٹیکس کو 8 سے کم کرکے 5 فیصد کردیا گیا ہے۔ آلات کی فراہمی، سامان کی ترسیل، کارگو سروسز، انشورینس، نیلامی اور کاروبار سے منسلک دیگر شعبوں میں خدمات فراہم کرنے والے اداروں پر بھی سیلز ٹیکس کی شرح کو 15 فیصد سے کم کرکے 2 فیصد کر دیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   چھوٹی گاڑیاں پسند کرنے والوں کیلئے بڑی خوشخبری، جلد ہی 800 سی سی گاڑی پاکستان میں متعارف کروانے کا امکان

پراپرٹی ڈیلرز، گاڑیوں کی خرید و فروخت کرنے والے باگین، کار واش، کال سینٹرز اور ڈیجیٹل اور انفارمیشن ٹیکنالوجی شعبے میں خدمات سے وابستہ اداروں اور افراد پر پر سیلز ٹیکس کی شرح کو5 فیصد سے کم کرکے 2 فیصد کر دیا گیا ہے۔

خیبرپختونخوا میں سیلز ٹیکس میں کمی” ایک تبصرہ

تبصرے بند ہیں