کورونا نے پاکستان میں پنجے گاڑ لیے، تعداد 53 ہوگئی

سکھر: ایران سے آنے والے 13 زائرین میں کورونا وائرس کی تصدیق کے بعد پاکستان میں مریضوں کی مجموعی تعداد 53 ہوگئی۔

حکومت سندھ کے ترجمان مرتضی وہاب نے اپنی ٹویٹ میں بتایا کہ تفتان سے سکھر آنے والے 13 افراد میں وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔ متاثرہ افراد ان زائرین میں شامل تھے جنھیں وطن واپسی پر قرنطینہ میں رکھا گیا تھا۔

اس سے قبل محکمہ صحت سندھ نے کراچی میں مزید 4 کورونا وائرس کیسز کی تصدیق کی جب کہ اسلام آباد میں بھی کورونا وائرس کا ایک اور مریض سامنے آگیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   کورونا کی نئی قسم، پاکستان کی مختلف ممالک پر سفری پابندیاں

ترجمان پمز کے مطابق کورونا سے متاثرہ خاتون کے شوہر میں بھی وائرس کی تصدیق ہوگئی ہے جس کے بعد دونوں میاں بیوی کو پمز کے آئیسولیشن وارڈ میں داخل کردیا گیا ہے، پمز میں داخل خاتون اپنے شوہر و بچوں کے ہمراہ یوکے سے پاکستان آئی تھیں تاہم آج شوہر میں بھی وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   کورونا وبا کے باعث سیاحتی مقامات کو بند کردیا گیا

ترجمان پمز کا کہنا ہے کہ پمز میں کورونا سے متاثرہ 4 کنفرم مریض داخل ہیں، چاروں مریضوں کو آئیسولیشن وارڈ میں داخل کردیا ہے جب کہ کورونا کے شبہ میں روزانہ درجنوں لوگ ٹیسٹ کے لیے آرہے ہیں، روزانہ 4 سے 5 مشتبہ مریض سامنے آرہے ہیں جن کے نمونے ٹیسٹ کے لیے این آئی ایچ بھجوائے جاتے ہیں۔

محکمہ صحت سندھ نے کراچی میں کورونا وائرس کے مزید 4 کیسز کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ 3 متاثرہ افراد کچھ دن قبل سعودی عرب سے کراچی پہنچے تھے جن میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی جب کہ ایک متاثرہ شخص کی سفری تفصیلات معلوم کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:   ’خلائی مخلوق‘ زمین کی طرف آرہی ہے؟

سندھ میں کرونا وائرس سے متاثر مریضوں کی تعداد 35 ہوگئی ہے جس میں سے 2 صحت یاب ہوکو گھر جا چکے ہیں جب کہ بلوچستان میں 10، گلگت بلتستان میں 3، لاہور میں ایک اوراسلام آباد میں 4 افراد میں کرونا وائرس کی تصدیق ہوئی۔