آئی جی پنجاب نے 36 ڈی ایس پیز کو معطل کر دیا

لاہور (ویب ڈیسک) آئی جی پنجاب نے 36ڈی ایس پیز کو معطل کر دیا۔ تمام ڈی ایس پیز کی تنخواہیں اور مراعات بھی روک دی گئیں، ذرائع کے مطابق پنجاب پولیس کے حوالے سے بڑا اقدام سامنے آیا ہے۔ انسپکٹر جنرل (آئی جی) پنجاب نے صوبہ بھر سے 36 ڈپٹی سپریٹنڈنٹ پولیس (ڈی ایس پیز) کو معطل کر دیا ہے۔

معطلی کے بعد تمام پولیس افسران کی تنخواہیں اور مراعات بھی روکنے کا حکم جاری کر دیا گیا ہے، معطل ہونے والوں میں ڈی ایس پی فتح احمد اور سید ریاض علی شاہ شامل ہیں، محمد ریاض، فتح عالم اور انور سعید طاہر بھی معطل کر دیئے گئے جبکہ ملک داؤد احمد اور ڈی ایس پی منصور ناجی بھی معطلی سے بچ نہیں پائے،

یہ بھی پڑھیں:   عمران خان نے وفاقی کابینہ کا اجلاس 16 جولائی کو طلب کر لیا

دوسری جانب خبر یہ ہے کہ آصف زرداری کی بریت کے خلاف اپیل کی اسلام آباد ہائیکورٹ میں سماعت مقرر ہوگئی۔ نیب کی اپیل پر سماعت 18اپریل کو اسلام آباد ہائیکورٹ کا ڈویژن بینچ کرے گا۔ نیب نے مؤقف اختیار کیا کہ بریت کا حکم دینے والی عدالت کے پاس اس کا اختیار ہی نہیں تھا، تفصیلات کے مطابق آصف زرداری کی بریت کے خلاف اپیل کی اسلام آباد ہائیکورٹ میں سماعت مقرر کر دی گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   لائن آف کنٹرول پر بھارتی فوج کی بلا اشتعال فائرنگ، پاک فوج کی بھرپور جوابی کاروائی

نیب کی اپیل پر سماعت 18اپریل کو اسلام آباد ہائیکورٹ کا ڈوژن بینچ کرے گا۔ نیب نے مؤقف اختیار کیا کہ بریت کا حکم دینے والی عدالت کے پاس اس کا اختیار ہی نہیں تھا، خیال رہے کہ 2014 میں نیب نے زرداری کی بریت ہائیکورٹ میں چیلنج کی تھی۔

یہ بھی پڑھیں:   مریم نواز کا امریکی ناظم الامور کو خط جعلی اور جھوٹ ہے، ترجمان مسلم لیگ (ن)

دو کرپشن ریفرنسز پر آصف زرداری بری ہوئے جبکہ کیس ایک بار پھر عدالت میں آ گیا ہے، اب ئی خبر آئی ہے کہ آئی جی پنجاب نے 36ڈی ایس پیز کو معطل کر دیا۔ تمام ڈی ایس پیز کی تنخواہیں اور مراعات بھی روک دی گئیں ہیں یہ فوری طور پر کیا گیا۔