چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ نے برطرفی کے خلاف سابق جج شوکت عزیز صدیقی کی درخواست سماعت کے لیے مقرر کردی

اسلام آباد(سی پی پی) چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ نے برطرفی کے خلاف سابق جج شوکت عزیز صدیقی کی درخواست سماعت کے لیے مقرر کردی ۔جسٹس مشیر عالم پانچ رکنی بینچ کی سربراہی کریں گے ۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ نے برطرفی کے خلاف درخواست پر سماعت کے لیے لارجر بینچ تشکیل دے دیا ہے، جسٹس مشیر عالم کو پانچ رکنی بینچ کا سربراہ مقرر کیا گیا ہے جب کہ جسٹس طارق مسعود، جسٹس اعجاز الااحسن، جسٹس مظہر عالم اور جسٹس سجاد علی شاہ بینچ کے ارکان میں شامل ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:   پہلی بیوی کی اجازت کے بغیر دوسری شادی کرنے پر 3ماہ قید کی سزا سنا دی

لارجر بینچ 25 مارچ دوپہر ایک بجے برطرفی کے خلاف سابق جج شوکت عزیز صدیقی کی درخواست کی سماعت کرے گا۔واضح رہے کہ سپریم کورٹ نے 21 فروری کو اسلام آباد ہائیکورٹ کے سابق جج جسٹس شوکت عزیز صدیقی کی برطرفی کے خلاف ان چیمبر اپیل سماعت کے لیے منظور کی تھی11اکتوبر 2018 کو ججز کے خلاف شکایات کی سماعت کرنے والی سپریم جوڈیشل کونسل کی سفارش پر جسٹس شوکت عزیز صدیقی کو عہدے سے برطرف کردیا گیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں:   وہ نشہ جو ایٹم بم سے بھی زیادہ خطرناک پاکستانیوں کو خبر دار کردیا گیا

جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے برطرفی اور سپریم جوڈیشل کونسل کی رپورٹ کو سپریم کورٹ میں چیلنج کیا تھا تاہم رجسٹرار سپریم کورٹ نے ان کی درخواست پر اعتراضات عائد کئے تھے۔ شوکت عزیز صدیقی نے اعتراضات دور کرنے اور اپیل کی منظوری کے لیے درخواست دائر کی تھی۔