قرضوں کی دلدل سے نکل رہے ہیں، عمران خان

پشاور(مانیٹرنگ ڈیسک)وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ تحریک انصاف کی حکومت نے قبائلی علاقوں کے لیے صحت کارڈ کا اجراء کرکے ایک اور وعدہ پورا کردیا ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے صحت انصاف کارڈ کے اجراء سے تقریب سے کرتے ہوئے کہا ہے کہ قبائلی عوام کی طرز زندگی کو بہتر بنانے کے لیے انقلابی اقدامات کیے ہیں۔

صحت انصاف کارڈ کے اجراء سے قبائلی عوام کی مدد کے ایک اور وعدے کی تکمیل ہوگئی، ملک قرضوں میں ڈوبا ہوا تھا، کچھ حد تک اس مشکل سے نکل گئے ہیں،

یہ بھی پڑھیں:   شادی کی عمر کی حد 18 سال مقرر کرنے کا بل منظور

اگرچہ مکمل تو نہیں نکلے لیکن سر پانی سے باہر آگیا ہے۔ وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ غریب خاندانوں کی سب سے بڑی مشکل علاج معالجہ کرانا ہے،

اس بنیادی ضرورت کو مدنظر رکھتے ہوئے تحریک انصاف نے ایسی اسکیم متعارف کرائی ہے جس کے تحت ایک خاندان اس ہیلتھ کارڈ سے 7لاکھ 20 ہزار روپے تک علاج کراسکتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   نوازشریف کی ای سی جی غیر تسلی بخش قرار،ڈاکٹرز بھی پریشان

عمران خان کا مزید کہنا تھا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں قبائلی عوام کا سب سے زیادہ نقصان ہوا ہے، جس کا سب سے زیادہ احساس تحریک انصاف کو ہے اور اسی وجہ سے میں نے وہاں ملٹری آپریشن کی مخالفت بھی کی تھی۔

قبائلی عوام کے لیے مزید فنڈز جاری کررہے ہیں اور ایک ہیلتھ یونٹ بنانے کا بھی پروگرام ہے۔ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کی آمد کے حوالے سے وزیراعظم کا کہنا تھا کہ سعودی عرب ملک میں سرمایہ کاری گا جس سے روزگار کے مواقع پیدا ہوں گے اورغربت کا خاتمہ ہوگا۔

یہ بھی پڑھیں:   اسلام آباد ہائی کورٹ نے نواز شریف کی طبی بنیادوں پر ضمانت کی استدعا مسترد کردی

سرمایہ کاری سے ملکی دولت میں اضافہ ہوگا جو قرضوں کی واپسی میں مددگار ثابت ہوگی۔