چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی اعتراضات،ن لیگ کی پی اے سی کے اِن کیمرہ اجلاس بلانے کی تجویز

اسلام آباد(بیورورپورٹ) چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی شہباز شریف پر حکمران جماعت کی طرف سے اٹھنے والے اعتراضات کے معاملے پر پی اے سی کا داخلی ان کمیرہ اجلاس متوقع ہے جبکہ مسلم لیگی رکن شیخ روحیل اصغر نے اعتراضات کا جائزہ لینے کے لئے پی اے سی کے اِن کیمرہ اجلاس بلانے کی تجویز بھی پیش کر دی ہے ۔

نجی ٹی وی کے مطابق نیب کی زیر حراست مسلم لیگ ن کے صدر اور قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کو پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا چیئرمین بنانے کے خلاف حکمران جماعت پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے انہیں ہٹانے کی تحریک زور پکڑتی جا رہی ہے اور گذشتہ روز وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری اور پی ٹی آئی کے سیکرٹری جنرل ارشد داد نے بھی پی آئی سی کی چیئرمین شپ سے شہباز شریف کو ہٹانے کا با ضابطہ مطالبہ کیا گیا تھا

یہ بھی پڑھیں:   چین نے مسعود اظہر کو عالمی دہشت گرد قرار دینے کے معاملے پرمثبت پیش رفت ہونے کا اشارہ دے دیا

حکمران جماعت کی جانب شہباز شریف پر اعتراضات اور انہیں چیئرمین شپ سے ہٹانے کے مطالبے کے بعد پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا اِن کیمرہ اجلاس متوقع ہے جبکہ پاکستان مسلم لیگ (ن)کی طرف سے بھی ان کیمرہ اجلاس بلانے کی تجویز پیش کردی گئی ہے ۔ مسلم لیگ (ن) کے ارکان کاکہنا تھا کہ پی اے سی کو داخلی اجلاس میں پاکستان تحریک انصاف کے اعتراضات کا جائزہ لینا چاہیے۔ ان کیمرہ اجلاس بلانے کی تجویز شیخ روحیل اصغر نے کی تھی جس پر دیگر اراکین بھی متفق تھے۔ جلد پی اے سی کا داخلی اجلاس متوقع ہے ان کیمرہ اجلاس کے فیصلوں کے بارے میں میڈیا کو بریفنگ دینے نہ دینے کا فیصلہ نہ ہوسکا ہے

یہ بھی پڑھیں:   بحریہ ٹاؤن کراچی کی زمین کی مد میں 358 ارب روپے دینے کی پیشکش