میری ہمیشہ خواہش تھی کہ اعتزاز احسن کا شاگرد بنوں، چیف جسٹس ثاقب نثار

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار نے کہا ہے کہ میری طرف سے کسی کی دل آزاری ہوئی ہے تو معاف کردیں۔ سپریم کورٹ میں آج دوران سماعت چیف جسٹس پاکستان کا سینئر وکیل اعتزاز احسن سے خوش گوار مکالمہ ہوا جس کے دوران چیف جسٹس نے کہا کہ میری طرف سے کسی کی دل آزاری ہوئی ہے تو معاف کردیں۔ چیف جسٹس نے کہا کہ تسلیم کرتا ہوں کہ میری ہمیشہ خواہش تھی کہ اعتزاز احسن کا شاگرد بنوں، لیکن خواہش کے باوجود اعتزاز احسن کا شاگرد نہیں بن سکا۔ چیف جسٹس نے کہا کہ اعتزاز احسن سے اتنی محبت کے باوجود ان کے حق میں کوئی فیصلہ نہیں کیا، گلہ ختم ہے، اگر کسی کی دل آزاری ہوئی ہے تو معافی مانگ کر جاؤں گا، میری طرف سے کسی کی دل آزاری ہوئی ہے تو معاف کر دیں۔

یہ بھی پڑھیں:   سانحہ ساہیوال ،جے آئی ٹی کی سی ٹی ڈی اہلکاروں سے تفتیش میں تہلکہ خیز بات منظر عام پر آگئی

Related

اپنا تبصرہ بھیجیں