زلمے خلیل زاد کی پاکستان آمد ایک بار پھر تاخیر کا شکار

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)امریکی نمائندہ خصوصی برائے افغان مفاہمتی عمل زلمے خلیل زادکی پاکستان آمد تاخیر کا شکار ہوگئی۔ سفارتی ذرائع کے مطابق وزارت خارجہ کو زلمے خلیل زاد کی پاکستان آمد میں مبینہ تاخیر سے آگاہ نہیں کیا گیا. سفارتی ذرائع کے مطابق امریکی نمائندہ خصوصی کی پاکستان آمد کا شیڈول 2 بار تبدیل کیا گیا،انہوں نے شیڈول کے مطابق آج سہ پہر پاکستان پہنچنا تھا۔ سفارتی ذرائع کے مطابق امریکی حکام کی طرف سے ہونے والے شیڈول میں تبدیلی کے بعد انہیں آج رات 8 بجے کابل سے اسلام آباد پہنچناتھا۔ دوسری بار شیڈول بدل کر ان کی آمد کا وقت 9 سے رات 12 بجے کے درمیان بتایا گیا تھا لیکن اب وہ کل صبح 7 سے 8 کے درمیان بذریعہ خصوصی طیارہ اسلام آباد آئیں گے۔ زلمے خلیل زاد اپنے دورے کے دوران اعلیٰ سول و عسکری قیادت سے ملاقاتیں کریں گے اور ان کے ہمراہ امریکی ڈپٹی وزیر خارجہ ایلس ویلز بھی پاکستان آئیں گی۔ سفارتی ذرائع کا کہنا ہے کہ زلمے خلیل زاد باقاعدہ طور پر وفود کی سطح پر دفتر خارجہ میں مذاکرات کریں گے، ان کے دورے کا مقصد افغانستان میں فوجی انخلا اور افغان طالبان سے بات چیت پر مشاورت ہے۔ سفارتی ذرائع کے مطابق امریکی نمائندہ خصوصی کا دورہ پاکستان 19 جنوری تک ہوگا۔ گزشتہ روز وہ چین پہنچے تھے اور چینی قیادت سے ملاقاتوں میں خطے کی سیکیورٹی صورتحال اور افغان امن عمل کے معاملات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ امریکا نے افغانستان سے فوجی انخلا کے لیے پہلے مرحلے میں 7 ہزار فوجیوں کی واپسی کا اعلان کیا ہے اور امریکی فوجی انخلا سے قبل طالبان اور امریکا کے درمیان مذاکرات کے کئی دور بھی ہوچکے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:   حوثی ملیشیا زخمی ساتھیوں کے جسمانی اعضاء نکال کر بیچنے لگے!

Related

اپنا تبصرہ بھیجیں