پیشگی اقدامات پر اظہار اطمینان، آئی ایم ایف نے پاکستان سے معاہدے کے لیے گرین سگنل دیدیا

پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان ورچوئل مذاکرات میں اہم پیش رفت ہوئی ہے،

آئی ایم ایف نے پاکستان کی جانب سے اٹھائے گئے پیشگی اقدامات پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے اسٹاف سطح معاہدے کے لیے گرین سگنل دے دیا، رواں ہفتے یہ معاہدہ طے پانے کا امکان ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ زرمبادلہ کے ذخائر بہتر ہونے سے آئی ایم ایف کی آخری پیشگی شرط بھی پوری ہوگئی ہے، چین کے قرضے رول اوور ہونے سے زرمبادلہ کے ذخائر بہتر ہوگئے ہیں جبکہ باقی دوست ممالک کی جانب سے بھی پاکستان کیلئے اعلان کردہ پیکجز پر جلد عمل درآمد کا امکان ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف کے ساتھ سٹاف سطح کا معاہدہ ہونے کے بعد نویں اقتصادی جائزے اور پاکستان کے لیے ایک ارب دس کروڑ ڈالر کی اگلی قسط کی منظوری کے لیے معاملہ آئی ایما اف ایگزیکٹو بورڈ کے اجلاس میں پیش ہوگا

بورڈ کی منظوری کے بعد پاکستان کو اگلی قسط جاری ہونے کے ساتھ ہی آئی ایم ایف پروگرام بھی ٹریک پر آجائے گا۔

ملکی تجارتی خسارہ 100 فیصد بڑھ گیا

اسلام آباد: پاکستان بیورو آف اسٹیٹکس کی جانب سے جاری کردہ اعدادوشمار کے مطابق جولائی تا ستمبر برآمدات اور درآمدات کا درمیانی فرق 11.7 ارب ڈالر تک پہنچ گیا۔ گذشتہ مالی سال کے اسی عرصے میں تجارتی خسارہ 5.9 ارب ڈالر تھا۔ اس طرح تجارتی خسارے میں سو فیصد تک اضافہ ہوا ہے۔

تجارتی خسارے میں رجحان سے ظاہر ہوتا ہے کہ مالی سال کے اختتام تک تجارتی خسارہ مقررہ ہدف 28.4 ارب ڈالر سے بہت اوپر چلاجائے گا۔ رواں مالی سال کے ابتدائی 2 ماہ کا تجارتی خسارہ ہی سالانہ ہدف کے 41 فیصد سے زائد ہے۔

جولائی تا ستمبر کے دوران ملکی برآمدات 27.3 فیصد اضافے سے لگ بھگ 7 ارب ڈالر رہیں۔ گذشتہ مالی سال کی اسی مدت میں برآمداتی حجم 5.4 ارب ڈالر تھا۔ اس طرح جولائی تا ستمبر برآمدات میں 1.5 ارب ڈالر کا اضافہ ہوا۔ پاکستان بیورو آف اسٹیٹکس کے مطابق جولائی تا ستمبر درآمدات 65 فیصد اضافے سے 18.6 ارب ڈالر رہیں۔ اس مدت میں درآمداتی حجم میں 7.3 ارب ڈالر کا اضافہ ہوا۔

ڈالر کے مقابلے میں روپے کی قدر میں اضافے

کراچی: زرمبادلہ کی دونوں مارکیٹوں میں بدھ کو بھی روپے کے مقابلے میں ڈالر کی قدر کو مزید تنزلی کا سامنا رہا.

ڈالر کے اوپن مارکیٹ ریٹ 161روپے سے نیچے آگئے۔ انٹربینک مارکیٹ میں ڈالر کی قدر اتارچڑھاو کے بعد مزید 29پیسے کی کمی سے 160روپے 62پیسے پر بند ہوئی جبکہ اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر کی قدر 40پیسے کی کمی سے 160روپے 70پیسے پر بند ہوئی۔

پاکستان میں یورو5 فیول متعارف کروا دیا گیا

پی ایس او یورو 5 متعارف کروانے والی پہلی آئل مارکیٹنگ کمپنی بن گئی۔

اسلام آباد:پاکستان میں پہلی بار یورو 5 فیول متعارف کروا دیا گیا ہے، اور پی ایس او یورو 5 ہائی اوکٹین فیول متعارف کروانے والی پہلی آئل مارکیٹنگ کمپنی بن گئی ہے۔ پیٹرول پمپ پر یورو 5 فیول کی افتتاحی تقریب کا انعقاد کیا گیا جس میں وفاقی وزیر توانائی و پیٹرولیم عمر ایوب اور معاون خصوصی برائے پیٹرولیم ندیم بابر نے شرکت کی۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ندیم بابر کا کہنا تھا کہ یورو 5 اہم چیز ہے جس کے لئے حکومت نے پالیسی تبدیل کی، آئندہ نسلوں کوگرین پاکستان دینے کے لئے کلین فیول ضروری ہے،

وفاقی وزیرنے کہا کہ زرمبادلہ کے ذخائر ڈیڑھ سے دو ہفتے کے رہ گئے ہیں، لیکن دنیا نے عمران خان پر اعتماد کیا اور آج وہ دن آگیا ہے جہاں سے ہم ٹیک آف کررہے ہیں،

سونے نے تمام ریکارڈ توڑ دیے

لاہور: سونے کی قیمت نے پچھلے تمام ریکارڈ توڑ دیے،سونے کی فی تولہ قیمت ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح 97000 پر پہنچ گئی۔

سونے کی بڑھتی ہوئی قیمتوں نے سونے کے خریدارواں کو حیرت میں مبتلا کردیا، رواں ہفتے کے چوتھے روز سونے کی قیمتوں میں ایک بار پھر اضافہ ریکارڈ کیاگیا،سونے کی قیمتوں میں700 روپے کا مزید اضافہ ہوا۔

خالص 24 قیراط فی تولہ سونا 98 ہزار روپے کا ہو گیا،22 قیراط فی تولہ سونا 89ہزار 833روپے کا ہو گیا،رواں کاروباری ہفتے کے دوران سونا 5200 روپے مہنگا ہوا،رواں کاروباری ہفتے میں عالمی مارکیٹ میں 41 ڈالر فی اونس سونا مہنگا ہوا۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز بھی سونے کی قیمتوں میں 2500 روپے کا اضافہ ہوا تھا جس سے خالص 24 قیراط فی تولہ سونا 95ہزار روپے کا ہوگیا اور 22 قراط فی تولہ سونا 87083 روپے کا ہوگیا اور 10 گرام چاندی 950 روپے کی ہوگئی۔سونے کی تیزی کے ساتھ بڑھتی ہوئی قیمتوں سے متوسط طبقہ بھی سونا خریدنے سے گریزاں ہے۔

خام تیل کی قیمت 18 سال کی کم ترین سطح پر

کراچی: کورونا وائرس کی عالمی وباء کے سبب دنیا بھر کی اسٹاک مارکیٹ منہ کے بل جاگریں جب کہ خام تیل کی قیمت 18 سال کی کم ترین سطح پر آگئی۔

دنیا بھر کی طرح پاکستان کی اسٹاک مارکیٹ بھی شدید مندی کا شکار رہی، گزشتہ ایک ہفتے کے دوران پاکستانی اسٹاک مارکیٹ کا 100 انڈیکس 5393پوائنٹس کم ہو کر 30667 پوائنٹس کی سطح پر آگیا، پاکستانی اسٹاک مارکیٹ کو 2008ء کے بحران کے بعد کسی ایک ہفتہ میں سب سے زیادہ گراوٹ کا سامنا کرنا پڑا اور انڈیکس میں ایک ہی ہفتہ میں 15فیصد تک کمی واقع ہوئی۔

پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں گزشتہ ہفتے مندی کا طوفان سرمایہ کاروں کے 900 ارب روپے نگل گیا چھوٹے سرمایہ کار وں کا دیوالیہ نکل گیا۔ گزشتہ ہفتہ پانچ میں چار روز مارکیٹ اتنی تیزی سے گری کہ اسے خودکار حفاظتی مکینزم کے تحت چار مرتبہ 45 منٹ کے لیے بند کرنا پڑا۔

مندی کے باعث غیرملکی سرمایہ کاروں نے اسٹاک مارکیٹ میں کی جانے والی 2کروڑ ڈالر کی سرمایہ کاری نکال لی۔ کاروباری ہفتے میں 7607 پوائنٹس کے بینڈ میں کاروبار ہو،انڈیکس کی بلند ترین سطح 36060 ، کم ترین 28453 رہی۔ کاروباری ہفتے میں 1 ارب 19 کروڑ شیئرز کے سودے ہوئے۔ ہفتہ وار کاروباری مالیت 43 ارب روپے رہی، مارکیٹ کیپٹلائزیشن 887 ارب روپے کم ہوکر 5907 ارب ہوگئی ہے۔

ایک ہفتے کے دوران دنیا بھر کی اسٹاک مارکیٹوں میں مندی کے بادل چھائے رہے۔ امریکی اسٹاک مارکیٹ میں 21 فیصد کمی ریکارڈ کی گئی، چین کی اسٹاک مارکیٹ میں7 فیصد کمی، جاپان کی اسٹاک مارکیٹ میں 8 فیصد،ہانگ کانگ 5 فیصد کمی، فرانس 6 فیصد،جرمنی 7 فیصد اور بھارت کی اسٹاک مارکیٹ میں 14 فیصد کمی رہی۔

دالوں، گھی، چینی کی قیمتوں میں 20 روپے کلو تک کا اضافہ

اسلام آباد: اوپن مارکیٹ میں دالوں، گھی، چینی کی قیمتوں میں 20 روپے کلو تک کا اضافہ ہوگیا۔

کریانہ مرچنٹس، نان بائیوں نے قیمتوں میں سرکاری اضافہ کے لئے پرائس کنٹرول کمیٹی کا اجلاس بلانے کی درخواست کردی۔ صدر کریانہ مرچنٹ پرویز بٹ کے مطابق دال مونگ 230 روپے سے 250 روپے کلو، دال ماش220 سے 227 روپے کلو، چینی کی قیمت میں 2 روپے کلو تھوک کا اضافہ ہوگیا۔ چینی کی 50 کلو کی بوری اضافہ کے ساتھ 4020 روپے ہوگئی، جبکہ سفید چنا کی قیمت 10 روپے اور چاول 12 روپے مہنگا ہوگیا۔

صدر پرویز بٹ کریانہ مرچنٹس ایسوسی ایشن کا کہنا ہے کہ سپلائی میں بھی کمی ہورہی ہے، اجناس کے دام میں اضافہ کے ساتھ نئی قیمتیں مقرر کی جائیں، ورنہ ہڑتال پر مجبور ہوں گے۔ خوراک کے ساتھ ساتھ ” کفن” کی قیمتوں میں بھی اضافہ ہوگیا ہے جب کہ پھولوں کی پتیوں کی قیمت میں ریکارڈ کمی دیکھنے میں آئی۔ مردانہ کفن سلا ہوا 1200 روپےسے بڑھ کر 2100 روپے ہوگیا، زنانہ کفن سلا ہوا 1300 روپے سے بڑھا کر 2200 سے 2500 روپے کر دیا گیا۔ قبروں پر ڈالنے والے خشک پھول اور چادر بھی 200 روپے سے بڑھ کر 500 سے ایک ہزار روپے تک ہوگئی۔

دوسری جانب شادی، ولیمہ، مہندی، سیاسی و سماجی تقریبات ختم ہونے سے پھولوں کے ہار، گجرے، پھولوں کی پتیوں اور مالا کی قیمت کم ہوگئی۔ گلاب کے پھولوں کی پتیاں 400 روپے کلو سے کم ہوکر صرف 100 روپے کلو ہوگئیں جب کہ گلاب کے پھولوں کا ہار صرف 10 روپے، گجرے 8 سے 10 روپے اورمالا کی قیمت 15 روپے ہوگئی۔

اسٹیٹ بینک نے شرح سود میں کمی کردی

اسلام آباد: اسٹیٹ بینک نے مانیٹری پالیسی بیان جاری کردیا جس میں شرح سود کم کرکے 12 اعشاریہ 5 فیصد کردیا۔

اسٹیٹ بینک کی جانب سے جاری کردہ مانیٹری پالیسی بیان میں کہا گیا کہ مانیٹری پالیسی کمیٹی نے شرح سود 75 بیسس پوائنٹ کم کردیا ہے اور شرح سود 12.5 فیصد مقرر کیا گیا ہے جب کہ رواں مالی سال افراط زر 11 سے 12 فیصد رہے گا۔

اسٹیٹ بینک کا کہنا ہے کہ کرونا وائرس کے باعث پاکستان کی معاشی ترقی کی شرح نمو میں کمی ہوگی اور مجموعی قومی پیداوار کی نمو 3 فیصد رہے گی، جب کہ کورونا وائرس سے پیدا ہونے والی صورتحال کے باعث نئی صنعتیں لگانے کیلیے 100 ارب روپے کی نئی اسکیم متعارف کرائی گئی ہے۔

گورنر اسٹیٹ بینک نے مانیٹری پالیسی بیان پر میڈیا بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ پاکستان کے زرمبادلہ کے ذخائر کرونا وائرس سے پیدا ہونے والے حالات سے نمٹنے کے لیے کافی ہیں، اسٹیٹ بینک کرونا وائرس سے نمٹنے کے لیے اسپتالوں کو 5 ارب کے قرضے دے گا اور ایک اسپتال زیادہ سے زیادہ 20 کروڑ قرضہ حاصل کرسکے گا، یہ رقم کرونا وائرس سے نمٹنے، ویکسین، وینٹی لیٹر اور دیگر ضروری اشیا کی خریداری کے لیے استعمال کی جاسکے گی۔

خام تیل کی قیمتوں میں ریکارڈ کمی

نیویارک: برینٹ خام تیل اور امریکی خام تیل کی قیمتوں میں شدید کمی دیکھی گئی ہے، امریکی خام تیل کی قیمت 30 ڈالر 34 سینٹس فی بیرل ہوگئی۔

بین الاقوامی میڈیا کے مطابق ایشیائی منڈی میں خام تیل کی قیمت میں زبردست کمی دیکھی گئی ہے، برینٹ خام تیل کی قیمت میں 2 ڈالر 80 سینٹس کی کمی واقع ہوئی جس کے بعد برینٹ خام تیل کی قیمت 31 ڈالر 4 سینٹس فی بیرل ہوگئی۔ امریکی خام تیل کی قیمت میں 1 ڈالر 78 سینٹس کی کمی جس کے بعد امریکی خام تیل کی قیمت 30 ڈالر 34 سینٹس فی بیرل ہوگئی۔

گزشتہ ہفتے عالمی منڈی میں خام تیل کی قیمت میں 29 سال کی ریکارڈ کمی ہوئی تھی، امریکی خام تیل کی قیمت 30 فیصد کمی کے بعد 29 ڈالر 88 سینٹ فی بیرل پر آگئی تھی۔ عالمی منڈی میں خام تیل کی یہ قیمتیں 1991 کی خلیجی جنگ کے بعد 29 سال کی کم ترین سطح پر آئی تھیں۔ امریکی خام تیل کی قیمت میں 11 ڈالر 374 سینٹس کی کمی ہوئی جس کے بعد امریکی خام تیل کی قیمت 29 ڈالر 88 سینٹ فی بیرل ہوگئی تھی۔

سونے کی قیمتوں میں نمایاں کمی

کراچی: بلین مارکیٹ میں سونے کی قیمتوں میں کمی کے مثبت اثرات مقامی صرافہ بازاروں پر بھی نظر آئے اور نرخوں میں نمایاں کمی ریکارڈ کی گئی۔

بین الاقوامی مارکیٹ میں کرونا وائرس کے خوف کے پیش نظر سرمایہ کاروں نے ٹریڈنگ کے دوران محتاط رویہ اختیار کیا جس کی وجہ اسٹاک میں مندی کے بادل چھائے رہے۔ عالمی مارکیٹ میں سونے کے ریٹ 1588 ڈالر فی اونس کھلے، مندی کی وجہ سے قیمت میں مزید کمی ریکارڈ کی گئی۔ بلین مارکیٹ میں سونا 57 ڈالر کمی کے بعد 1531 ڈالر فی اونس کی سطح پر پہنچا اور اسی بھاؤ میں لین دین ہوئی۔

آل پاکستان جیولرز ایسوسی ایشن کے چیئرمین محمد ارشد کے مطابق عالمی مارکیٹ میں ہونے والی کمی کے بعد مقامی صرافہ بازاروں میں بھی سونے کی فی تولہ اور دس گرام کی قیمتوں میں بالترتیب 3200 اور 2743 روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی۔ حالیہ کمی کے بعد آج چودہ مارچ کو ملک بھر کے صرافہ بازاروں میں فی تولہ سونا 90 ہزار 300 جبکہ دس گرام 77 ہزار 417 روپے کے ساتھ فروخت ہوا۔