گورنر پنجاب نے اسپیکر کی رولنگ مستر د کردی

لاہور: گورنر پنجاب بلیغ الرحمٰن نے اسپیکر پنجاب اسمبلی کی رولنگ کا جواب دیتے ہوئے آرٹیکل 130 کی شق 7 کے تحت حکم نامہ جاری کردیا۔

میڈیا کے مطابق گورنر پنجاب کی جانب سے اسپیکر کی رولنگ مسترد کرنے سلسلے میں مراسلہ بھی جاری کردیا ہے۔

گورنر پنجاب محمد بلیغ الرحمٰن نے اسپیکر سبطین خان کی رولنگ کے جواب میں 3 صفحات پر مشتمل جواب دیا جس میں گورنر کی جانب سے اسپیکر کی کل کی رولنگ کو غیر آئینی اور غیر قانونی قرار دیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   عالمی ادارہ صحت نے کورونا وائرس کے خلاف ہمارے اقدامات کی تعریف کی ہے، وزیراعظم عمران خان

گورنر پنجاب نے کہا کہ آپ نے آئین کے تحت حلف اٹھایا ہے آپ اس سے انحراف نہیں کرسکتے جب کہ آئین کا دفاع اور قانون کی پاسداری اسپیکر کی ذمہ داری ہے۔

بلیغ الرحمٰن نے کہا کہ اسپیکر آئینی ذمہ داری کی ادائیگی کیلئے ذاتی پسند کو ملحوظ خاطر نہ رکھیں کیوں کہ آئین کے مطابق اسپیکر، ایمانداری اور غیر جانبداری سے آئینی ذمہ داریاں ادا کرنے کے پابند ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:   گندم کی عالمی منڈی میں قیمت کم، پاکستان کو 9 ارب روپے کی بچت

خیال رہے کہ اسپیکر پنجاب اسمبلی سردار محمد سبطین خان گورنر پنجاب کے مس کنڈکٹ کے خلاف صدر پاکستان کو گورنر کی تبدیلی کیلئے خط لکھنے کا کہا تھا۔

ذرائع کے مطابق خط میں استدعا کی جائے گی کہ گورنر صدر کا نمائندہ ہے اسے آئین شکنی پر مبنی اقدامات سے روکا جائے۔

یہ بھی پڑھیں:   ”نواز شریف کی میڈیکل رپورٹ جعلی ہے“غلام سرور خان کو دعویٰ مہنگا پڑ گیا.

واضح رہے کہ وزیراعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الہیٰ کی جانب سے اسمبلی کا اجلاس کل تک معطل کردیا گیا تھا جب کہ گورنر بلیغ الرحمٰن کی جانب اعتماد کا ووٹ لینے کیلئے آج اجلاس طلب کیا تھا۔