ملک دیوالیہ ہونے کی خبروں میں کوئی صداقت نہیں، احسن اقبال

اسلام آباد: وفاقی وزیر احسن اقبال نے کہا ہے کہ ملک ڈیفالٹ ہونے کی خبروں میں کوئی صداقت نہیں ہے پی ٹی آئی اور اس کے میڈیا میں موجود کچھ حواری بے بنیاد پروپیگنڈا کر رہے ہیں۔

عمرہ ادائیگی کے بعد جدہ میں پاکستان قونصلیٹ میں پاکستانی کمیونٹی سے خطاب کرتے ہوئے احسن اقبال نے کہا کہ بیرون ملک ہر شخص کی اچھائی یا برائی اس کے ذاتی نام سے نہیں بلکہ اس کے ملک سے پہچانی جاتی ہے، سعودی عرب میں مقیم پاکستانی سعودی عرب کے قوانین کا احترام کرتے ہوئے پاکستان کا نام روشن کریں۔

احسن اقبال نے کہا کہ بدقسمتی سے پنجاب میں اور کے پی میں پی ٹی آئی کی حکومت ہے وہ مرکز کے خلاف ہر قدم اٹھاتی ہے اور ملک کے سیکیورٹی اداروں کے خلاف مہم چلاتی ہے، مرکزی وزیر داخلہ کی گرفتاری کے وارنٹ جاری کیے جاتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:   جب ن لیگ کو لگے گا کہ نوازشریف کو واپس آنا چاہیے تو وہ آجائیں گے، مریم نواز

ن لیگی رہنما نے کہا کہ پی ٹی آئی والے سیلاب زدگان کی امداد کے لیے وزیراعظم کی عالمی کوششوں کو سبوتاژ کرنے کے لیے مہم چلا رہے ہیں، یہ کون سی ملک سے محبت ہے کہ سیلاب زدگان کی امداد کے حوالے سے بھی انہوں نے اقوام متحدہ سے لے کر دوست ممالک کو بھی کہا کہ ان کی امداد نہ کرو، یہ عوام کی نمائندہ حکومت نہیں ہے۔

احسن اقبال نے کہا کہ گزشتہ حکومت کی ناقص پالیسیوں کی بدولت ملکی معیشت داؤ پر لگ چکی تھی، ہم نے آئی ایم ایف کے ساتھ معاہدے پر عمل کرکے ملکی معیشت کو بہتر بنایا ہے، بھارت اور پی ٹی آئی دو قوتیں تھیں جو پاکستان کے آئی ایم ایف معاہدہ کی بحالی کے لیے مخالفت میں کمربستہ تھیں۔

یہ بھی پڑھیں:   جب تک چھوٹے صوبے ترقی نہیں کریں گے پاکستان ترقی نہیں کرسکتا،شہبازشریف

انہوں ںے کہا کہ موجودہ حالات میں ملک ڈیفالٹ ہونے کی خبروں میں کوئی صداقت نہیں، پی ٹی آئی اور اس کے کچھ میڈیا میں حواری بے بنیاد پروپیگنڈا کر رہے ہیں، سابقہ حکومت نے اقتدار چلے جانے کا غم اس قدر لیا کہ پوری قوم کو ایک دوسرے کا گریبان پکڑا دیا ہے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ پاک چین راہداری کا دوبارہ آغاز ہوچکا ہے، دوست ممالک سمیت دنیا بھر سے تعلقات کو بہتر بنایا گیا ہے، ہم سی پیک کے طرز کا سعودی عرب سے بھی اقتصادی تعاون قائم کرنا چاہتے ہیں، سی پیک کے تحت چین اور سعودی عرب کو مشترکہ سرمایہ کاری کی پیشکش کی گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   سندھ کے عوام کا پیسہ دبئی اور لندن میں خرچ ہورہا ہے ،فواد چوہدری

انہوں نے کہا کہ پاکستان کا مستقبل اس بات پر ہے کہ ہم اپنی برآمدات 30 سے 100 ارب ڈالر کتنے برسں میں کرتے ہیں؟ ہر بیرون ملک مقیم پاکستانی کا فرض ہے کہ وہ برآمدات میں اضافے کے لیے اپنا کردار ادا کرے۔

احسن اقبال نے کہا کہ بیرون ملک محنت کش پاکستانیوں کے لیے انشورنس اسکیم متعارف کروائی جائے گی تاکہ ان کی حادثاتی موت کی صورت میں ان کے خاندان کی کفالت ہوسکے۔