برآمدات 25.3ارب ڈالر کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئیں

کراچی: ملکی برآمدات تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئیں جب کہ مالی سال2020-21ء میں برآمداتی حجم 25.3 ارب ڈالر کی ریکارڈ سطح پر رہا۔

وزارت تجارت کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق برآمدات میں سال بہ سال کی بنیاد پر 18 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔

وزیراعطم کے مشیر برائے تجارت عبدالزاق داؤد نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ جون میں برآمدات 2.7 ارب ڈالر رہیں جو ایک ماہ کے دوران برآمدات کا سب سے زیادہ حجم ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ مالی سال میں خدمات کی برآمدات کا تخمینہ 5.9 ارب ڈالر لگایا گیا ہے، اس طرح اشیاء و خدمات کی مجموعی برآمدات 31 ارب ڈالر سے زائد رہنے کی توقع ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   سرکاری قرضوں میں 149کھرب روپے کا اضافہ

مشیر تجارت نے کووڈ19 کی مشکل صورتحال کے باوجود یہ سنگ میل حاصل کرنے پر برآمدکنندگان کو سراہتے ہوئے کہا کہ یہ کوئی معمولی کامیابی نہیں ہے کیوں کہ کورونا کی وجہ سے بیشتر ممالک میں لاک ڈاؤن تھا اور دنیا بھر میں کاروباری سرگرمیاں شدید متاثر ہوئیں۔ عبدالرزاق داؤد کا کہنا تھا کہ نئے مالی سال میں برآمدات میں 5فیصد کی شرح سے اضافہ ہوگا۔

یہ بھی پڑھیں:   بھارت میں مقیم پاکستانی خاتون وطن واپسی کی منتظر

عارف حبیب لمیٹڈ کے ریسرچ ہیڈ طاہر عباس نے ایکسپریس ٹریبیون سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ برآمداتی کا تاریخی سطح پر پہنچنا ٹیکسٹائل سیکٹر کا رہین منت ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ پہلے 11 ماہ کے دوران ٹیکسٹائل سیکٹر کی شرح نمو 10 فیصد رہی جس کے نتیجے میں مجموعی برآمداتی حجم میں اضافہ دیکھنے میں آیا۔

یہ بھی پڑھیں:   شبلی فراز نے بجلی کے بلوں میں 60 فیصد تک کمی کی خوشخبری سنادی

ٹاپ لائن سیکیورٹیز کے عاطف ظفر کا کہنا تھا کہ لاک ڈاؤن کے بعد صنعتیں جلد کھولنے کی وجہ سے برآمدات بڑھیں۔ پاکستان بزنس فورن کے نائب صدر احمد جواد نے کہا کہ برآمدات میں مزید اضافے کی گنجائش موجود ہے۔