وزیر اعظم کا 980 ارب روپے کے ریلیف پیکج کا اعلان

Spread the love

اسلام آباد: وزیر اعظم عمران خان نے پیٹرولیم مصنوعات پر 15 روپے فی لیٹر کمی سمیت 980 ارب روپے کے ریلیف پیکج کا اعلان کردیا۔

ملک میں کورونا وائرس سے پیدا ہونے والی صورت حال کے لیے وزیر اعظم نے ریلیف پیکچ کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ 300 یونٹ بجلی استعمال کرنے والےصارفین سے3ماہ کی اقساط میں بل وصول کریں گے۔ مزدورطبقےکیلئے 2 سوارب کافنڈزرکھاہے۔

عمران خان نے کہا کہ اسمال اورمیڈیم انڈسٹری کیلئے100ارب کا فنڈرکھاہے۔ مزدوروں کے لیے فوری 200ارب روپے جاری کیے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ برآمداتی صنعتوں کو فوری ٹیکس ریفنڈ جاری کرنے کے لیے 100 ارب دیے جائیں گے۔ دالوں سمیت ضروری اشیا پر ٹیکس میں کمی لارہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:   وزیراعظم کا الیکٹرانک ووٹنگ لانے کا اعلان

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ غریب طبقے کو ریلیف دینے کے لیے 150 ارب روپے چار مہینے کے لیے رکھے گئے ہیں۔پناہ گاہوں میں اضافہ کریں گے۔ یوٹیلٹی اسٹور کے لیے 50 ارب روپے مزید مختص کیے جائیں گے۔ گندم کی خریداری کے لیے 280 ارب روپے رکھے گئے ہیں تاکہ کسانوں کے ہاتھ میں پیسہ آئے اور کم سے کم دیہی علاقوں میں حالات قابو میں رہیں۔ علاوہ ازیں نیشنل ڈزاسٹر میجمنٹ اتھارٹی کے لیے 25 ارب روپے جاری کیے گئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:   وزیر اعظم کے مقابلے حمزہ شہباز، آصف علی زرداری اور بلاول بھٹو زرداری کی آمدن میں اضافہ

عمران خان نے کہا کہ ہم ملک بھرمیں کرفیولگانے کےمتحمل نہیں ہوسکتے۔ ہمیں کوروناسے نہیں،اس کےخوف اورغلط فیصلوں سے زیادہ نقصان ہوسکتا۔ کرفیولگانےسےملک پربہت برااثرپڑے گا ہم کچی آبادیوں میں لوگوں کوراشن نہیں پہنچا سکتے۔

انہوں نے کہا کہ کرفیوآخری مرحلہ ہے اس سے متعلق سوچ سمجھ کر فیصلہ کرناپڑے گا،جہاں کوورنا پھیلنے کا خدشہ ہے ہم اس علاقے کو سیل کریں گے، وفاق سمیت تمام صوبوں کو دو ہفتو ں بعد پالیسی پر نظر ثانی کرنا پڑے گی۔ ایک سوال کے جواب میں وزیراعظم نے کہا کہ وزارت اطلاعات کو ہدایت جاری کی ہے کہ میڈیا ورکرز کے لیے بھی پیکج تیار کیا جائے۔

یہ بھی پڑھیں:   ووٹ لینے کے لیے بھارت اور اسرائیل کی قیادت اپنے عوام کو گمراہ کر رہی ہے، وزیر اعظم عمران خان