کرونا وائرس، ایپل کمپنی کے صارفین کے لیے اہم خبر

Spread the love

نیویارک: امریکا کی معروف ٹیکنالوجی کمپنی ایپل نے چین کے علاوہ دنیا بھر میں اپنے تمام اسٹورز دو ہفتوں تک بند رکھنے کا اعلان کردیا۔

خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق ایپل کے چیف ایگزیکٹو آفیسر ٹم کک نے جمعے کے روز دنیا بھر میں موجود ریٹیل اسٹورز بند کرنے کے حوالے سے انتظامیہ کو خط لکھا۔ خط میں لکھا گیا ہے کہ کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے پیش نظر چین کے علاوہ دنیا بھر میں قائم اسٹورز کو فوری طور پر بند کیا جائے تاکہ ملازمین اور صارفین کو کمپنی کی وجہ سے کسی بھی خطرے کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

یہ بھی پڑھیں:   انٹارکٹیکا کی برف تیزی سے پگھلنے لگی

ٹم کک نے لکھا کہ دنیا بھر میں کام کرنے والے ملازمین کو اچھا ماحول فراہم کرنا چاہتی ہے، کرونا وائرس کے خوف یا افراتفری میں ملازمین الجھن اور پریشانی کا شکار رہیں گے۔ اس خط کی روشنی میں ایپل نے دنیا بھر میں اپنے اسٹورز بند کرنے کا اعلان کرتے ہوئے ملازمین کو پیش کش کی کہ اگر وہ خواہش مند ہوں تو گھر سے بیٹھ کر بھی کام کرسکتے ہیں۔ اس کے ساتھ ہی ایپل کمپنی نے چین میں قائم اپنے تمام 42 اسٹورز کو کھولنے کا اعلان بھی کیا۔

یہ بھی پڑھیں:   چاند پر ریت کی 40 فٹ گہری تہہ دریافت

خیال رہے کہ چین میں کرونا وائرس کے مریضوں کی تعداد میں کمی اور صحت یاب ہونے والے مریضوں کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے جس کے باعث وہاں سرگرمیاں معمول پر آرہی ہیں۔ کرونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والا چین کا شہر ووہان تھا جہاں اب لاک ڈاؤن ختم کردیا گیا جبکہ سڑکوں پر جو سناٹا تھا وہ بھی ختم ہوگیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   کرتب دکھانے والا دنیا کا پہلا انسان بردار ڈرون

یاد رہے کہ ایپل نے کرونا کیسز رپورٹ ہونے کے بعد چین میں اپنے تمام اسٹورز بند کرنے کا اعلان کردیا تھا البتہ صارفین کو پیش کش کی گئی تھی کہ وہ ویب سائٹ کے ذریعے اشیاء کی خریداری کرسکتے ہیں۔ علاوہ ازیں فیس بک، ٹویٹر نے بھی دنیا بھر میں اپنے دفاتر کو بند کر کے ملازمین کو گھروں سے کام کرنے کی ہدایت کردی ہے۔