دنیا کی سب سے چھوٹی اور کم خرچ ایم آر آئی مشین فروخت کے لیے پیش

کیلیفورنیا: امریکی ادارے ’’ہائپر فائن ریسرچ انکارپوریٹڈ‘‘ نے اعلان کیا ہے اسے اپنی تیار کردہ مختصر اور کم خرچ ایم آر آئی مشین فروخت کرنے کےلیے امریکی فوڈ اینڈ ڈرگ ایڈمنسٹریشن (ایف ڈی اے) کی جانب اجازت مل گئی ہے جس کے بعد اس کمپنی نے اپنی ویب سائٹ پر آرڈرز لینا بھی شروع کردیئے ہیں۔

واضح رہے کہ ایک عام ایم آر آئی مشین لگ بھگ 6 ٹن وزنی ہوتی ہے اور جسامت میں بھی بہت بڑی ہوتی ہے جبکہ ایسی ایک مشین کو چلانے میں جتنی بجلی خرچ ہوتی ہے وہ دس اوسط پاکستانی گھروں کےلیے کافی ہوتی ہے۔ علاوہ ازیں، ایم آر آئی مشین کی قیمت بھی پانچ کروڑ روپے یا اس سے بھی زیادہ ہوتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   سیب بلڈ پریشر کم کرنے میں مؤثر ہے، طبی ماہرین

یہی وجہ ہے کہ ایم آر آئی کی تنصیب کےلیے خصوصی کمرہ اور بجلی کا تھری فیز کنکشن درکار ہوتے ہیں، جیسے کسی کارخانے میں ہوتا ہے۔ اسی طرح ایم آر آئی اسکین کا نتیجہ آنے میں بھی کم از کم 15 گھنٹے لگ جاتے ہیں جبکہ ایک سادہ سے ایم آر آئی اسکین کی لاگت بھی پچیس سے تیس ہزار روپوں کے درمیان ہوتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   اسپرین سے موٹے افراد میں مہلک کینسر کے خطرے میں کمی

چھ سال کی مسلسل تحقیق کے بعد تیار ہونے والی، ہائپرفائن کی اس مختصر ایم آر آئی مشین نے یہ تمام مسائل ایک ساتھ حل کردیئے ہیں۔ مثلاً اس کی اونچائی صرف 4.75 فٹ ہے۔ یہ صرف 635 کلوگرام وزنی ہے (یعنی موجودہ ایم آر آئی مشین سے دس گنا کم وزن ہے)۔

کیٹاگری میں : صحت