جھنگ:پولیس نے سال 2019 کے دوران1621 اشتہاری مجرمان، 669عدالتی مفروران اور 322عادی مجرمان گرفتار کئے

Spread the love

ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر جھنگ کی ہدایت پر جھنگ پولیس نے سنگین جرائم میں ملوث مجرمان اشتہاری، عدالتی مفروران، چوروں، ڈکیتوں، منشیات فروشوں اور ناجائز اسلحہ رکھنے والوں کے خلاف سخت کاروائیاں کیں۔جھنگ پولیس نے سال 2019 کے دوران1621 اشتہاری مجرمان، 669عدالتی مفروران اور 322عادی مجرمان گرفتار کئے جن میں کیٹیگری اے کے143 مجرمان اشتہاری بھی شامل ہیں نیز مختلف وارداتوں میں ملوث 15 گینگز کو گرفتار کر کے ان کے قبضہ سے مال مسروقہ بھی برآمد کیا گیا۔ جھنگ کو منشیات جیسی لعنت سے پاک کرنے کے لئے 890 منشیات فروشوں کو قانون کے شکنجے میں لا کر پابند سلاسل کرایا گیا جن میں 178 مقدمات 9-سی کے بھی شامل ہیں۔ ملزمان سے چرس333.206کلوگرام، افیون 6.956 کلو گرام،ہیروئن7.586 کلو گرام،لہن2750 لیٹر، شراب کی 10046 بوتلیں اور 41 چالو بھٹیاں بھی برآمدکی گئیں۔نیشنل ایکشن پلان پر عمل کرتے ہوئے جھنگ کو نا جائز اسلحہ سے پاک کرنے کی مہم کے دوران 595 ملزمان کو گرفتار کر کے انکے خلاف مقدمات کا اندراج کیا گیا۔ ملزمان کے قبضہ سے بندوقیں 101عدد، رپیٹر12 عدد، ریوالور39 عدد، پسٹل388 عدد، رائفلیں 48 عدد،کلاشنکوف03 عدد،کاربین08 عدد اور1264عددکارتوس برآمدکئے گئے۔ لاؤڈ سپیکر کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف88 مقدمات درج کرکے ان کے خلاف قانونی کاروائی کی گئی ہے۔ کھلا پٹرول فروخت کرنے پر 361 مقدمات درج کئے گئے۔غیر قانونی گیس کی ری فلنگ کرنے پر329 مقدمات، نہری پانی چوری کرنے پر 92 مقدمات اور بجلی چوری کے 469 مقدمات درج کئے گئے۔ آتش بازی کرنے والوں کے خلاف 96 مقدمات، ون ویلنگ کرنے والوں کے خلاف 07 مقدمات، کرایہ داری ایکٹ کے تحت 69 مقدمات، پرائس کنٹرول ایکٹ کے تحت 118 مقدمات،منی لینڈرنگ ایکٹ کے تحت 19 مقدمات، پیسٹی سائیڈ ایکٹ کے تحت 06 مقدمات، ٹیلی گراف ایکٹ کے تحت 47 مقدمات،سکیورٹی ایکٹ کے تحت 68 مقدمات اور فرٹیلائزر ایکٹ کے تحت 10 مقدمات درج رجسٹر کر کے ذمہ داران کے خلاف قانونی کاروائی عمل میں لائی گئی ہے، اس کے علاوہ ڈکیتی،رہزانی، چوری،مویشی چوری کے مقدمات میں ملوث ملزمان کوگرفتار کرکے ان کے قبضہ سے 79749371 روپے مالیت کامال مسروقہ بھی برآمد کیا گیا جو کہ بلا تاخیر حوالے مالکان کیا گیا ہے۔ سال 2019 میں قتل ہونے والی 10 سالہ معصوم بچی شازیہ کے قاتل کو صرف 5 دن کے اندر ٹریس کر کے گرفتار کر لیا گیا جو کہ پابند سلاسل ہے جسے عوام نے بڑا سراہا ہے اور پولیس کے کردار کی تعریف کی ہے

یہ بھی پڑھیں:   شہداء کشمیر کا خون رائیگاں نہیں جائے گا،شیخ محمد اقبال