وزیراعظم کے خلاف توہین عدالت کی نظرثانی درخواست خارج

Spread the love

اسلام آباد: ہائیکورٹ نے وزیراعظم عمران خان کے خلاف توہین عدالت کی نظرثانی درخواست خارج کردی۔

اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے وزیراعظم کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی نہ کرنے کے فیصلے پرنظرثانی درخواست کے خلاف سماعت کی۔

درخواست گزارنے موقف اختیارکیا کہ عمران خان نے اپنی تقریرسے عدلیہ کو متنازعہ بنانے کی کوشش کی، توہین عدالت کا الزام وزیراعظم کی تقریرکے متن سے واضح ہے، عمران خان نے اعلیٰ عدلیہ کی تضحیک کی اورمذاق اُڑایا، عمران خان کو توہین عدالت قانون کے تحت سزا سنائی جائے۔

یہ بھی پڑھیں:   کرتار پور راہداری کی تعمیر اور گوردوارے کی آرائش کا پہلا مرحلہ مکمل

چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے ریمارکس دیئے کہ توہین عدالت صرف اس فرد اورعدالت کے درمیان ہوتی ہے، جوکوئی کچھ کہہ رہا ہے اسے کہنے دیں، منتخب نمائندوں کوکیوں گھسیٹا جائے؟ عمران خان کو عوام نے منتخب کیا ، ہمیں عوام کا احترام ہے، ہم کسی فردِ واحد کو نہیں، اسے منتخب کرنے والے عوام کو دیکھتے ہیں۔ یہ عدالت ہمیشہ منتخب عوامی نمائندوں سے متعلق حکم جاری کرنے میں احتیاط سے کام لیتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   نیا پاکستان ہا ؤسنگ سکیم