میرے خلاف مواخذہ امریکی جمہوریت کے خلاف کھلی جنگ ہے، ڈونلڈ ٹرمپ

Spread the love

واشنگٹن: ڈونلڈ ٹرمپ نے امریکی ایوان نمائندگان کی اسپیکر نینسی پلوسی کو خط میں کہا ہے کہ میرے خلاف مواخذہ امریکی جمہوریت کے خلاف کھلی جنگ ہے۔

برطانوی نشریاتی ادارے (بی بی سی) کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ڈیموکریٹ رہنما نینسی پلوسی کو ایک خط لکھا ہے جس میں انہوں نے کہا کہ میرے خلاف مواخذہ امریکی جمہوریت کے خلاف کھلی جنگ ہے اور آپ نے میرے خلاف مواخذہ شروع کرکے اس کی اہمیت کو انتہائی کم کر دیا ہے۔ ٹرمپ نے دعویٰ کیا کہ انہیں مواخذے کی تحقیقات کے آغاز سے ہی بنیادی آئینی عمل اور شواہد پیش کرنے کے حق سمیت کئی بنیادی حقوق سے محروم رکھا گیا۔

یہ بھی پڑھیں:   چین میں ایغور مسلمان کن بھیانک مظالم کا شکار ہیں؟

امریکی ایوان نمائندگان کی جوڈیشری کمیٹی نے ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف مواخذے کے دو الزامات کی منظوری دے رکھی ہے اور ایوان نمائندگان میں آج ڈونلڈ ٹرمپ کے مواخذے کے لیے ووٹنگ ہے اور سینیٹ میں ان الزامات پر ٹرائل آئندہ ماہ ہونے کا امکان ہے۔ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو اختیارات کے غلط استعمال اور کانگریس کی راہ میں رکاوٹ ڈالنے کے الزامات کا سامنا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   اخوان المسلمون کو عالمی دہشت گرد تنظیم قرار دینے کا مطالبہ