مسلمانوں کیخلاف شہریت ترمیمی بل کی منظوری،مودی سرکار پریشان-

Spread the love

ٹوکیو: بھارت میں گوہاٹی میں سکیورٹی کی بگڑتی ہوئی صورتحال کی وجہ سے جاپانی وزیر اعظم شنزو آبے اپنے ہندوستانی ہم منصب نریندر مودی کے ساتھ 15 سے 17 دسمبر تک سالانہ سربراہی مذاکرات کے لئے اپنے تین روزہ ہندوستان کے سفر کو منسوخ کرنے پر غور کر رہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:   اقوام متحدہ نے خواتین کیلئے بڑا اعلان کر دیا

بھارت میں شہریت (ترمیمی)بل پر پچھلے دو دنوں میں آسام میں بڑے پیمانے پر احتجاج دیکھنے میں آرہا ہے ، ہزاروں افراد بل کو ختم کرنے کے مطالبے کے ممنوعہ احکامات کی خلاف ورزی کرتے ہوئے سڑکوں پر نکل آئے ہیں۔ ،وزیراعظم آبے گوہاٹی میں سیکیورٹی کی صورتحال خراب ہونے کے سبب ہندوستان کا اپنا دورہ منسوخ کرنے پر غور کررہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:   نوجوت سدھو کی بھارتی حکومت پر تنقید، سوالات اٹھا دیئے

نئی دہلی میں ، وزارت خارجہ کے ترجمان رویش کمار سے جب یہ پوچھا گیا کہ کیا حکومت گوہاٹی میں 15 سے 17 دسمبر تک ہندوستان – جاپان کے سالانہ سربراہی اجلاس کی میزبانی کرے گی ، تو انہوں نے کہا ، کہ ان کے پاس اس بارے میں کوئی اطلاع نہیں ہے۔ساؤتھ ایشین وائر کے مطابق یہ پوچھے جانے پر کہ کیا حکومت وینیو منتقل کرنے پر غور کر رہی ہے ، کمار نے کہا: “میں اس بارے میں کوئی وضاحت کرنے کی پوزیشن میں نہیں ہوں۔ میرے پاس کوئی اپ ڈیٹ نہیں ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   امریکا میں نو مسلم ایرانی صحافی گرفتار