سندھ میں گورننس خراب ہی نہیں ناکام ہے، عمران خان

Spread the love

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ سندھ میں گورننس خراب ہی نہیں ناکام ہے اور اربوں روپے کی کرپشن کے بڑے ثبوت ملنے پر یہ سب پریشان ہیں۔

صوبہ سندھ کی سیاسی صورتحال پر وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت اہم اجلاس ہوا، وزیراعظم ہاؤس میں ہونے والی بیٹھک میں پی ٹی آئی، ایم کیوایم پاکستان اور جی ڈی اے کے رہنماؤں سمیت آئی جی سندھ اور چیف سیکریٹری بھی شریک ہوئے۔

یہ بھی پڑھیں:   امریکہ نے پاکستان کی پانچ کمپنیوں پر پابندیاں عائد کردیں

ذرائع کے مطابق اجلاس کے شرکا نے وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ کے خلاف قانونی کارروائی کا مطالبہ کرتے ہوئے شکایات کے انبار لگا دیئے، شرکا کا کہنا تھا کہ سندھ حکومت دیہی و شہری علاقوں کو نظرانداز کررہی ہے۔

شرکا نے کہا کہ پیپلزپارٹی کے اہم رہنماؤں کے خلاف کرپشن کے شواہد بھی ملے ہیں، صوبائی حکومت کی زیادتیاں ایک طرف سندھ میں وفاقی ادارے بھی تعاون نہیں کرتے، مرادعلی شاہ کے ہوتے ہوئے وفاقی حکومت کا کوئی منصوبہ مکمل نہیں ہوسکے گا۔

یہ بھی پڑھیں:   جے یو آئی کے پلان بی پر عملدرآمد شروع، قومی شاہراہیں بند کرنے کا اعلان

ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیراعلی مراد علی شاہ کے خلاف شکایات سردارعلی گوہر مہر، ڈاکٹر ذوالفقارمرزا، خرم شیرزمان، حلیم عادل اور دیگر نے کیں۔اس موقع پر وزیراعظم عمران خان نے سندھ میں گورننس اور سیاسی حالات کی بہتری کے لیے کردار ادا کرنے کا اظہارکرتے ہوئے کہا کہ سندھ میں گورننس خراب ہی نہیں ناکام ہے، اربوں روپے کی کرپشن کے بڑے ثبوت ملنے پر ہی یہ سب پریشان ہیں، میں کرپشن کے خلاف جہاد کرنے آیا ہوں، کسی سے کوئی ڈیل ہوگی نہ ڈھیل دی جائے گی۔

یہ بھی پڑھیں:   ایشیا کپ کرکٹ ٹورنامنٹ 2020 کی میزبانی پاکستان کو مل گئی