نواز شریف کے دماغ کی سرجری ہوگی یا اسٹنٹ ڈالا جائے گا، ذاتی معالج نواز شریف

Spread the love

لندن/لاہور: نواز شریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان نے کہا ہے کہ سابق وزیراعظم کے دماغ کی شریان کی سرجری ہوگی یا اس میں اسٹنٹ ڈالا جائے گا۔

لندن میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے سابق وزیراعظم نواز شریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر نے بتایا کہ نواز شریف کے پلیٹ لیٹس کاؤنٹ غیر مستحکم ہیں جنہیں ادویات کے ذریعے خاص سطح پر رکھا جارہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   حکومت کا 53 ہزار حجاج کو اخراجات کی 80 کروڑ روپے سے زائد رقم واپس کرنے کا فیصلہ

ڈاکٹر عدنان نے بتایا کہ دماغ کو خون منتقل کرنے والی شریان کے علاج کے لیے ویسکیولر سرجن کی خدمات حاصل کی ہیں، ویسکیولر سرجن دوبارہ نواز شریف کا معائنہ کریں گے اور سابق وزیراعظم کے دماغ کی شریان کی سرجری کی جائے گی یا اسٹنٹ ڈالا جائے گا۔

نواز شریف کے دماغ کو خون پہنچانے والی شریان 80 فیصد بند ہونے کا انکشاف

یہ بھی پڑھیں:   حکومت کو فیصلہ کرنا ہوگا کہ قاتلوں کے ساتھ ہے یا شہدا کے ساتھ، بلاول بھٹو زرداری

ڈاکٹر عدنان کا کہنا تھا کہ نواز شریف کے مرض کی مزید تحقیقات جاری ہیں اور ریگولر فالو اپ جاری ہے، جس میں خون کے ٹیسٹ بھی شامل ہیں، لاہور میں نواز شریف کو دل کا دورہ بھی پڑا تھا اس لیے کارڈیالوجی کی ایک ٹیم بھی نواز شریف کا معائنہ کررہی ہے، انجیو گرام اور انجیو پلاسٹی پی سی آئی کیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں:   مولانا فضل الرحمان کی ڈیڈ لائن کا آخری دن، اہم پارٹی اجلاس طلب