”نواز شریف کی میڈیکل رپورٹ جعلی ہے“غلام سرور خان کو دعویٰ مہنگا پڑ گیا.

اسلام آباد :‌ اسلام آباد ہائیکورٹ نے غلام سرور خان کو 14 نومبر کو طلب کرلیا۔ پیر کو وفاقی وزیر غلام سرور خان کے خلاف توہین عدالت درخواست پر تحریری حکمنامہ جاری کر دیاگیا

جس کیمطابق چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ نے وفاقی وزیر غلام سرور خان کو طلب کرلیا۔ عدالت نے کہاکہ غلام سرور خان پیش ہوکر بتائیں کیوں نہ ان کے خلاف توہین عدالت کی کاروائی شروع کی جائے،وزراء کے بیانات عدالتوں پر اثر انداز ہونے اور عدالتوں پر اعتماد ختم کرنے کی کوشش ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   چینی، پیاز سمیت 22 اشیائے صرف کی قیمتیں بڑھ گئیں

تحریری حکمنامہ کے مطابق غلام سرور خان نے بیان دیا کہ نواز شریف کی میڈیکل رپورٹ جعلی ہے،وزیر نے تاثر دیا کہ جعلی رپورٹ پیش کرکے عدالت کو گمراہ کیا گیا، وزراء کا مبینہ ڈیل کا تاثر دینا خود حکومت کے لیے فردجرم ہے۔

ہائی کورٹ نے کہاکہ ان بیانات سے میڈیکل رپورٹ پر بہت خدشات پیدا ہوگئے ہیں، انہیں میڈیکل رپورٹس کی بنیاد پر عدالت نے نواز شریف کیس پر عبوری حکم جاری کیا۔تحریری حکمنامہ کے مطابق غلام سرور خان کے جعلی میڈیکل رپورٹ کے بیانات بہت سنگین ہیں۔