حکومت نے ٹیکس اکٹھا کرنے کیلئے نیا پلان بنا لیا

Spread the love

اسلام آباد : حکومت نے دولت مند افراد اور دیگر شعبوں کو ٹیکس نیٹ میں لانے کے لیے ملک گیر ٹیکس دستاویزی مہم کے لیے جامع منصوبہ تشکیل دینے کا فیصلہ کیا ہے۔

رپورٹ کے وزیراعظم عمران خان نے ٹیکس ڈپارٹمنٹ کو 30نومبر تک تفصیلی منصوبہ پیش کرنے کی ہدایت کی ہے جس میں پیش کیے گئے اقدامات پر آئندہ 2 سال میں عملدرآمد کیا جائے گا۔ایک سینئر ٹیکس افسر نے کہا کہ دستاویزی مہم سے کاروباروں، رئیل اسٹییٹ اور انڈسٹریز سے متعلق معلوم کرنے میں مدد ملے گی۔

یہ بھی پڑھیں:   ایمریٹس نے پاکستانی مسافروں کے لئے سپر سیل کے نام سے خصوصی کرایوں کا اعلان کردیا

انہوں نے بتایا کہ ‘ وزیراعظم نے فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) کواس حوالے سے مقررہ مدت میں تجاویز پیش کرنے کی ہدایت کی ہے۔3 اکتوبر کو وزیراعظم نے اعلیٰ حکام سے اجلاس میں مقامی ٹیکسز میں اضافے سے متعلق مختلف تجاویز کا جائزہ لیا تھا۔انہوں نے کہا کہ ٹیکس حصول کے صحیح اقدامات اٹھانے چاہیئیں اور ان پر فوری عملدرآمد کرنا چاہیے۔

یہ بھی پڑھیں:   جنوبی کوریا کی گاڑیاں تیار کرنے والی بڑی کمپنی نے پاکستان میں بڑی سرمایہ کاری کا اعلان کردیا

ٹیکس دستاویزی مہم کے تحت مغربی ممالک کی طرح تمام کاروباری ٹرانزیکشنز کے لیے قومی شناختی کارڈ کو سوشل سیکیورٹی نمبر کے تحت تمام مقاصد کے لیے اپنانے کا فیصلہ کیا،‎ جس کے لیے جون 2020 کی ڈیڈلائن طے کی گئی ہے۔

اجلاس میں غور کیا گیا تھا کہ معیشت کو دستاویزی شکل دینا اور ڈیٹا مرتب کرنا تمام سرکاری اور نجی اداروں جیسا کہ مالیاتی اداروں اور یوٹیلیٹی کمپنیوں کی بنیادی ذمہ داری ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   اوگرا نے ایل پی جی کی قیمت میں اضافہ کر دیا،نوٹیفیکیشن جاری