ریاست کو کسی صورت کمزور نہیں پڑنے دیں گے، وزیراعظم

اسلام آباد: وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ ریاست کو کسی صورت کمزور نہیں پڑنے دیں گے۔

پاکستان تحریک انصاف کے رہنما ڈاکٹر بابر اعوان نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی جس میں ملک کی سیاسی صورت حال سمیت آئینی اور قانون امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں:   وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری سمیت 72 قومی اسمبلی کے اراکین کی رکنیت معطل

اس موقع پر وزیراعظم عمران نے کہا کہ ریاست پہلے اور سیاست بعد میں آتی ہے، ریاست کو کسی صورت کمزور نہیں پڑنے دیں گے، قانون کی نظر میں سب برابر ہیں، سب پر یکساں قانون کا اطلاق ہوگا، پاکستان کا استحکام اداروں سے وابستہ ہے۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ معیشت کے استحکام کے لیے کی جانے والی کوششیں رنگ لا رہی ہیں، کرنٹ اکاؤنٹ خسارے میں 32 فیصد کمی ریکارڈ ہوئی ہے، تجارتی خسارے میں کمی اور برآمدات میں اضافہ خوش آئند ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   طالبان نے 421 اضلاع میں سے ایک تہائی کا کنٹرول سنبھال لیا

وزیراعظم نے کہا کہ دنیا بھر سے آنے والے سکھ زائرین کو خوش آمدید کہنے کو تیار ہیں، کرتار پور راہداری بین المذاہب ہم آہنگی کی بہترین مثال ہوگا۔

اس موقع پر بابر اعوان نے کہا کہ مولانا کے دھرنے کی اصل وجہ معیشت میں بہتری ہے، دھرنا اعلی عدلیہ کے فیصلوں کی خلاف ورزی ہے، انہیں دھرنے کے لئے نہیں صرف مارچ کے لئے مشروط اجازت تھی۔