ڈاکٹر عافیہ کی والدہ عصمت صدیقی کا وزیراعظم عمران خان کے نام کھلا خط

خدارا … میری بیٹی کو وطن واپس لا ئیں

موت سے ہمکنار ہوتی ماں آپ سے درخواست کر رہی ہے

اپنے دورہ امریکہ میں عافیہ کی رہائ کو ایجنڈا میں شامل کریں

کراچی : ڈاکٹر عافیہ کی والدہ عصمت صدیقی نے وزیراعظم عمران خان کے نام ایک کھلے خط کے ذریعے اپیل کی ہے کہ وہ حالیہ دورہ امریکہ میں قوم کی بیٹی ڈاکٹر عافیہ کی رہائی کو بھی اپنے ایجنڈا میں شامل کریں۔ عمران خان کے نام کھلے خط میں انہوں نے لکھا ہے کہ میرے پیارے بیٹے عمران خان، اللہ کے فضل اور میرے جیسی مظلوم ماﺅں کی دعاﺅں سے آپ وزیراعظم پاکستان بن گئے ہو۔ ”مجھے آپ کو یہ یاد دلانے کی ضرورت نہیں ہے کہ میں کس طرح تکلیف اور کرب میں مبتلا ہوں، کیونکہ پاکستان کی مظلوم قیدی بیٹی کے ساتھ ہونے والی ناانصافی کو آپ بھی میری طرح یقینا سمجھتے ہیں“۔ انتہائی رنجیدہ دل مگر نئی امیدوں کے ساتھ میں آپ سے اپنی بیٹی ڈاکٹر عافیہ کو بچانے میں مدد کرنے کی درخواست کرتی ہوں، جس کا نام اب پاکستان کی عزت اور وقار کے انمٹ علامت بن چکا ہے۔ آپ کا دورہ امریکہ اور صدر ٹرمپ کے ساتھ مذاکرات میرے اور تمام پاکستانیوں کیلئے امید کی ایک نئی کرن بن چکے ہیں۔ مجھے پوری امید ہے کہ آپ نہ صرف اپنی بہن عافیہ کی رہائی کا مطالبہ کریں گے بلکہ اس معاملہ کوحل کریں گے جو کہ صرف ایک حقیقی لیڈر ہی کرسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ” میرے بیٹے، کیا مجھے آپ سے فون پر ہونے والی بات چیت کو یاد دلانے کی ضرورت ہے؟ آپ میرے لئے اس تاریک دور میں امید کی ایک کرن ہو“۔ مجھے یقین ہے کہ آپ مجھ سے اتفاق کرو گے کہ عافیہ کو واپس وطن لانا صرف کسی فرد واحد کا معاملہ نہیں ہے بلکہ یہ ہر پاکستانی کی اہمیت کو ظاہر کرنے کا اہم ترین مسئلہ ہے جو کہ دنیا پر یہ ثابت کرے گا کہ اب ہم بیٹی بیچنے والے لوگ نہیں ہیں، اب یہاں دنیا کو دکھانے کے لئے عمران خان موجود ہے کہ پاکستانی ایک پروقار اور بااصول قوم ہے, انہوں نے مزید کہا کہ “بھارت ایک دہشت گرد کو بچانے کے لئے ہر ممکن جدوجہد کرے گا کیونکہ وہ ان کا اپنا ہے، امریکہ دوبارہ ریمنڈ ڈیوس جیسے قاتلوں کو واپس لے جائے گا، کیا ہمیں اپنی معصوم بیٹی کے لئے کھڑے نہیں ہونا چاہئے؟ عافیہ نے کسی کو قتل نہیں کیا، وہ محبت اور امن کی داعی ہے اور آپ کو ایک ہیرو کا درجہ دیتی ہے۔ للہ! میں آپ سب سے پوچھتی ہوں کہ کیا ایک مردہ ماں کو اپنی بیٹی کو گلے لگانے کی اجازت دو گے اور کیا بچوں کو اپنی ماں کے جسد خاکی سے ملاﺅ گے؟ ”میں کمزور ہوتی جارہی ہوں اور میری صحت روبہ زوال ہے جیسے کہ دن سالوں میں سما جاتے ہیں، مگر مجھے اللہ اور اس کی کتاب قرآن مجید پر امید ہے کہ آپ جیسا ہی کوئی نجات دہندہ آئے گا، میں دعا گو ہوں کہ اللہ آپ کو یہ مسئلہ حل کرنے کی طاقت عطا فرمائے۔ خدارا! میری بیٹی کو واپس لے کر آئیں ، ایک موت سے ہمکنار ہوتی ماں آپ سے درخواست کر رہی ہے۔ ایک جراتمندانہ اقدام اٹھانے کیلئے اپنے دل میں ہمت پیدا کرو۔

یہ بھی پڑھیں:   الیکشن تک بھارتی مساجد کو نگرانی میں رکھنے کا منصوبہ

ان شاءاللہ آپ کے ذریعے اللہ پاکستان کو کامیاب اورقوم کے وقار میں اضافہ کرے گا۔ میری دعا ہے کہ اللہ آپ کی رہنمائی فرمائے“۔