لاہورمیں موسلا دھار بارش، شاہی قلعے کا 180 سال پرانا مرکزی دروازہ گر گیا

لاہور(سٹاف رپورٹر)پنجاب بھر میں مون سون کی بارشوں کا سلسلہ جاری ہے اور سڑکوں پر پانی کھڑا ہونے کی وجہ سے شدید ٹریفک جام ہوگیا ہے۔ لاہور سمیت مختلف شہروں میں شدید موسلا دھار بارش ہوئی جس کے نتیجے میں سڑکیں تالاب بن گئیں اور نشیبی علاقے زیر آب آگئے ہیں۔ موسلادھار بارش کے باعث لاہور کے شاہی قلعہ کا تاریخی روشنائی گیٹ بھی گرگیا، 180 سال پرانا روشنائی گیٹ شاہی قلعہ لاہورکا مرکزی دروازہ تصور کیا جاتا ہے۔ ڈائریکٹروالڈسٹی کا کہنا ہے کہ 180سال پرانا روشنائی گیٹ شدید بارش کے باعث گرا، تاہم گیٹ 3 سے 4 روز میں دوبارہ مرمت کر کے لگادیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں:   سعودی ولی عہد محمد بن سلمان 16 فروری کو پاکستان کا دورہ کریں گے

نکاسی آب کے ناقص انتظامات کی وجہ سے لاہور کے انڈر پاسز جھیل کا منظر پیش کررہے ہیں۔ شدید بارشوں کے باعث کئی علاقوں میں بجلی کی فراہمی بھی معطل ہوگئی ہے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق لاہور شہر میں اب تک 150 ملی میٹر بارش ہوچکی ہے۔ کئی مقامات پر مکانات کی چھتیں گر گئی ہیں جس کے نتیجے میں بہت سے لوگوں کے زخمی ہونے کی اطلاع ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   کورونا کا دوسرا مریض جاں بحق، متاثرہ افراد کی تعداد 307 ہوگئی

جناح اسپتال لاہور کی چھتیں بھی ٹپکنے لگی ہیں اور ایمرجنسی وارڈ بھی پانی میں ڈوب گیا۔ انتظامیہ نے اسپتالوں میں طبی عملے کو چوکس کردیا ہے اور متاثرہ افراد کو فوری طبی امداد فراہم کرنے کی ہدایت کی ہے۔

دوسری جانب محکمہ موسمیات نے رواں ہفتے کے دوران ملک کے بالائی وسطی علاقوں میں مزید مون سون بارش کی پیش گوئی کردی ہے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق لاہور، اسلام آباد، راولپنڈی، گوجرانوالہ، سرگودھا، فیصل آباد، ساہیوال، مردان، بنوں، ہزارہ، ژوب اور کشمیر سمیت مختلف اضلاع میں تیزہواؤں، آندھی اور گرج چمک کے ساتھ بارش کا امکان ہے۔