جج کو فارغ کرنے کا مطلب ہے کہ اعلیٰ عدلیہ نے حقائق کو تسلیم کرلیا ، مریم نواز

Spread the love

لاہور(نیوز رپورٹر) نائب صدر مسلم لیگ (ن) مریم نواز کا کہنا ہے کہ جج کو فارغ کرنے کا مطلب ہے کہ اعلیٰ عدلیہ نے حقائق کو تسلیم کرلیا جبکہ جج ارشد ملک کے الزامات میں رتی برابر سچائی نہیں۔ احتساب عدالت اسلام آباد کے جج ارشد ملک کو عہدے سے ہٹادیا گیا ہے اور انہوں نے اسلام آباد ہائی کورٹ میں بیان حلفی جمع کرایا ہے جس میں نواز شریف اور ن لیگ پر دھمکیوں اور رشوت دینے کے الزامات عائد کیے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:   حکومت کیخلاف 3 نکات پر زور، اپوزیشن اجلاس کی اندونی کہانی سامنے آگئی

مریم نواز نے جج ارشد ملک کے بیان حلفی کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ جج کے الزامات میں رتی برابر سچائی نہیں، اگر الزامات سچ ہوتے تو دوران مقدمہ وہ عدالت میں نواز شریف کا سامنا کرتے اور پوچھتے کہ آپ مجھے کیوں رشوت آفر کر رہے ہیں، جج ارشد ملک اعلیٰ عدلیہ کو مطلع کرتے اور دباؤ میں لانے پر بھری عدالت میں نواز شریف کی گرفتاری کا حکم صادر فرماتے۔

یہ بھی پڑھیں:   کرتارپور اجلاس؛ بھارت کا پاکستانی صحافیوں کو ویزا جاری کرنے سے انکار

Related