طوفانی موسم سے گندم، مکئی اور چنے کی فصلوں کو درمیانے درجے کا نقصان

اسلام آباد( آن لائن ) وزارت نیشنل فوڈ سیکیورٹی اینڈ ریسرچ نے اعلان کیا ہے کہ ملک میں خوراک کی حفاظت یا گندم کی قلت کا کوئی خطرہ نہیں ہے اور حالیہ بارشوں اور طوفانی موسم سے گندم، مکئی اور چنے کی فصلوں کو جو نقصان پہنچا ہے وہ صرف درمیانے درجے کا تھا۔ ایک بیان میں وزارت خوراک کی جانب سے کہا گیا کہ صورتحال گندم کی کمی کی طرف اشارہ نہیں کرتی اور گندم کی قلت سے متعلق قیاس آرئیاں غلط ہیں۔اس حوالے سے وزارت حالیہ بارشوں، خاص طور پر پنجاب میں فصلوں کے نقصانات اور متاثرہ گائوں سے متعلق اپ ڈیٹ کے لیے صوبائی محکمہ زراعت سے مکمل رابطے میں ہے۔بیان میں کہا گیا کہ وزیر برائے نیشنل فوڈ سیکیورٹی اینڈ ریسرچ محبوب سلطان خود اس تمام صورتحال کی نگرانی کر رہے ہیں اور وہ پنجاب اور خیبرپختونخوا کے متاثرہ اضلاع کا دورہ کر رہے ہیں۔اس کے ساتھ ساتھ وزارت دیگر فصلوں کا ڈیٹا حاصل کر رہی ہے اور محکمہ زراعت پنجاب نقصانات کا اندازہ لگانے کے لیے تمام علاقوں تک رسائی کے لیے کام کر رہا ہے جبکہ وزارت دیگر صوبوں سے بھی ڈیٹا حاصل کر رہی ہے۔اعلامیے میں کہا گیا کہ کسانوں کو پہنچنے والا نقصان ظاہر ہے کہ ایک تکلیف دہ خبر ہے اور وزیر نیشنل فوڈ سیکیورٹی نے اس بات کا اعادہ کیا ہے کہ حکومت نقصان کا اندازہ لگانے کی پوری کوشش کر رہی ہے اور جانی و مالی نقصان کا جائزہ لے کر جلد ہی متاثرہ کسانوں کے لیے ریلیف کا اعلان کیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں:   حکومت کی جانب سے جماعت الدعوۃ کے اثاثے منجمد کرنے کے خلاف سماعت مقرر