آمدن سے زائد اثاثہ جات اور مبینہ منی لانڈرنگ، حمزہ شہباز شریف کو طلب کر لیا گیا

لاہور(سی پی پی )آمدن سے زائد اثاثہ جات اور مبینہ منی لانڈرنگ کے کیس میں نیب نے پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر میاں حمزہ شہباز شریف کو 22 اپریل کو دوپہر 3بجے طلب کر لیا۔ذرائع کے مطابق نیب نے حمزہ شہباز شریف کو نیب کی جانب سے 12اور 16 اپریل کو طلب کیا تھا۔لیکن حمزہ شہباز شریف نیب کی تفتیش کے دوران تسلی بخش جوابات نہ دے سکے جس کو مد نظر رکھتے ہوئے نیب نے اب دوبارہ حمزہ شہباز شریف کو 22اپریل سوموار کو دوپہر 3بجے طلب کر لیا ہے۔نیب کی کمبائن انوسٹی گیشن ٹیم حمزہ شہباز شریف سے سوالات و جوابات کریگی۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ نیب ٹیم حمزہ شہباز سے مختلف اکانٹس سے آنیوالے پیسوں سے متعلق تفتیش کریگی۔یاد رہے نیب لاہور نے حمزہ شہباز کیخلاف رمضان شوگر ملز، صاف پانی کرپشن اور منی لانڈرنگ کیس میں تفصیلی جواب لاہور ہائیکورٹ میں جمع کرایا۔ایڈیشنل پراسیکیوٹر جنرل نیب نے جواب میں کہا حمزہ شہباز نے 2001 میں 2 کروڑ 20 لاکھ روپے کے اثاثے ظاہر کئے جو 2017میں 41کروڑ 10 لاکھ روپے ہو گئے، وہ 38کروڑ 80لاکھ کے اثاثے جائز ثابت نہیں کر سکے۔علاوہ ازیں انہوں نے 18کروڑ روپے بیرون ملک سے آمدن ظاہر کی جو جعلی ثابت ہوئی، اس طرح حمزہ شہباز کے مہنگے اثاثے اور فیکٹریاں ان کے ذرائع آمدن سے زیادہ ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:   آشیانہ ہاؤسنگ اسکیم کیس:‌ وکیل دفاع نے نیب کے پراسیکیوٹر کی جانب سے کیس کی پیروی کرنے پر اعتراض اٹھا دیا