حکومت نے اب ایسے ہر گھر کو 25 ہزار روپے ماہانہ دینے کا شاندار اعلان کر دیا

کراچی(ویب ڈیسک ) پاکستان اورسندھ پولیس کی تاریخ میں پہلی بارایسا ہونے جارہا ہے کہ دس سالہ سروس کے دوران طبعی طور پر انتقال کرجانیوالے پولیس افسران،جوانوں کے حقیقی اور قانونی ورثاء کو چھ ماہ تک پچیس ہزار روپئے ماہانہ امداد دی جائیگی اور اس تسلسل کو جاری رکھنے کے ضمن میں چھ ماہ بعد دوبارہ سے جائزہ لیکرفیصلہ کیاجائیگا۔

اس بات کا متفقہ فیصلہ آئی جی سندھ ڈاکٹرسید کلیم امام کی ہدایات کی روشنی میں سینٹرل پولیس آفس کراچی میں سندھ پولیس بینویلنٹ کے نویں اجلاس میں شریک بورڈ ممبران ایڈیشنل آئی سی ٹی ڈی،ایڈیشنل آئی جی اسپیشل برانچ،ڈی آئی جی ہیڈکوارٹرز سندھ،ڈی آئی جی فائنانس،اے آئی جی ویلفیئرسندھ،سی پی ایل سی چیف،گل احمد ٹیکسٹائل ملز کے ڈائریکٹرزید بشیر، صحافی شرمین عبید چنائے کے علاوہ حکومت سندھ کے نمائندگان کے باقاعدہ منظوری سے کیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں:   پلوامہ میں بھارتی فوج پر حملہ، مودی سرکار نے سازش کے تحت دلت اہلکاروں کو مروایا؟ سب کچھ سامنے آگیا

اجلاس میں متفقہ طور پر کیئے جانیوالے مزید ایک بڑے فیصلے کے مطابق شہید پولیس آفیسر یا جوان کی تجہیزوتکفین کی رقم کی ادائیگی کے ساتھ ساتھ انکے حقیقی اور قانونی ورثاء کو فوری اوربروقت تین لاکھ روپئے کی امدادی رقم کی بھی ادائیگی کی جائے گی تاکہ محکمانہ مراعات کی باقاعدہ فراہمی تک کی مدت کے دوران شہدائے پولیس کی فیملیز کے گزربسرکو آسان بنایا جاسکے ۔

یہ بھی پڑھیں:   شوہر کے ظلم سے تنگ بھارتی خاتون پاکستان بھاگ آئی

آئی جی سندھ نے دوران اجلاس اے آئی جی ویلفیئر سندھ کو ہدایات دیں کہ اسکولز، کالجزاور جامعات کے منتظمین سے روابط کرکے شہدائے پولیس کے بچوں کی تعلیم کے حوالے سے کوٹہ مختص کرنیکے اقدامات اٹھائے جائیں۔اکتوبر تا دسمبرسال2018کی سہہ ماہی میں5418 پولیس بیواؤں کے اکاؤنٹس میں مجموعی طور پر77.2 ملین کی رقم آن لائن منتقل کی گئی۔

یہ بھی پڑھیں:   محکمہ تعلیم پنجاب نے صوبہ بھر کے تمام تعلیمی اداروں میں موسم گرما کی تعطیلات کا مراسلہ جاری کر دیا

مزیدبرآں جنوری تا مارچ سال2019کی سہہ ماہی کے لیئے بھی بورڈ نی77.1 ملین کی رقم جبکہ ایسے ہی 913کیسز کے بقایاجات کی مد میں 68.1ملین کی رقم پولیس بیواؤں کے اکاؤنٹس میں آن لائن منتقل کرنیکی باقاعدہ اجازت ومنظوری دیدی ہے ۔