آئی سی سی نے کھیل میں کرپش کی روک تھام کے لیے انٹرپول کےساتھ مل کر کام کرنے کا فیصلہ کر لیا

اسلام آباد (زرائع)کرکٹ کی عالمی گورنگ باڈی انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) نے کھیل میں کرپش کی روک تھام کے لیے انٹرپول کےساتھ مل کر کام کرنے کا فیصلہ کر لیا۔

آئی سی سی اینٹی کرپشن یونٹ کے جنرل مینیجر ایلکس مارشکل فرانس کے شہر لیون میں قائم انٹرپول کے دفتر میں عالمی پولیس تعاون تنظیم کے حکام سے ملاقات کی جہاں دونوں اداروں نے مل کر کام کرنے اور کھیل میں کرپشن کو بچانے سے متعلق طریقہ کار پر غور کیا۔

یہ بھی پڑھیں:   پی ایس ایل 4؛ دبئی میں بارش کی وجہ سے ٹریننگ سیشن منسوخ

کرکٹ کی عالمی گورنگ باڈی کی جانب سے جاری ہونے والی پریس ریلیز کے مطابق ایلکس مارشل کا کہنا تھا کہ آئی سی سی اور انٹرپول مل کر کام کرنے کے خواہشمند ہیں اور لیون میں ہونے والی ملاقات بھی مثبت ثابت ہوئی۔

انہوں نے مزید کہا کہ آئی سی سی کے دنیا کے تمام ممبر ممالک کے ساتھ روابط بہت اچھے ہیں، تاہم انٹرپول کے ساتھ کام کرنے کا مطلب یہ ہوگا کہ آپ دنیا کے 194 ممالک کے ساتھ رابطے میں ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:   پاکستان سپرلیگ کا چوتھا ایڈیشن 14 فروری سے شروع ہو گا

آئی سی سی اینٹی کرپشن یونٹ کے جنرل مینیجر نے واضح کیا کہ ان کی زیادہ تر توجہ کھلاڑیوں کی تعلیم اور انہیں بدعنوان عناصر سے روکنا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اگر آئی سی سی کی تحقیقات میں یہ کرپشن ثابت ہوتی ہے تو وہ اس معاملے کو متعلقہ قانون نافذ کرنے والے اداروں کو بھیج دیں گے اور یہ کام ادارے کے لیے انٹرپول ہی کرے گا۔

یہ بھی پڑھیں:   انڈین پریمیر لیگ کا بارہواں ایڈیشن 23 مارچ سے شروع ہو گا

انٹرپول کے کرمنل نیٹ ورکس یونٹ کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر جوزے ڈی گریشیا کا کہنا تھا کہ کھیل لوگوں کو قریب لاتے ہیں لیکن پیشہ ور مجرم اپنا پیشہ بنانے کی غرض سے اس کی ساکھ کو نقصان پہنچا دیتے ہیں۔

ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ ہمارے آئی سی سی جیسے اداروں کے ساتھ مذاکرات اور تعاون کی مدد سے اپنے شراکت داروں کو جامع ردِ عمل دینے میں کامیاب ہوئے۔