3 سال قید کاٹنے والی چیلسی میننگ کو گواہی دینے سے انکار کرنے پر دوبارہ جیل بھیج دیا

واشنگٹن (زرائع) امریکی فوج کی خفیہ دستاویزات لیک کر کے وکی لیکس کو دینے کے الزام میں 3 سال قید کاٹنے والی خاتون چیلسی میننگ کو گرینڈ جیوری تحقیقات میں گواہی دینے سے انکار کرنے پر دوبارہ جیل بھیج دیا گیا۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے ’اے ایف پی‘ کے مطابق ورجینیا کی وفاقی عدالت میں امریکی اٹارنی کے ترجمان کے مطابق، امریکا کے ڈسٹرک جج کلاڈ ہلٹن نے چیلسی میننگ کو سزا کے طور پر نہیں بلکہ خفیہ کیس میں گواہی کے لیے مجبور کرنے کے لیے قید کرنے کا حکم دیا۔

یہ بھی پڑھیں:   برطانوی وزیراعظم تھریسامے کی حکومت بچ گئی، تحریک عدم اعتماد 19 ووٹوں سے ناکام

دوسری جانب چیلسی میننگ کی حمایت کرنے والی تنظیم، اسپیرو پرجیکٹ نے اپنے بیان میں کہا کہ ’چیلسی میننگ کو گواہی دینے سے انکار کرنے کی وجہ سے ریمانڈ پر وفاق کے حوالے کیا گیا‘۔