افضل کوہستانی قتل کیس: پولیس نے قتل کے الزام میں ایک ملزم کو گرفتار کرلیا

پشاور (زرائع) پولیس نے کوہستان ویڈیو اسکینڈل منظرِ عام پر لانے والے شخص افضل کوہستانی کے قتل کے الزام میں ایک ملزم کو گرفتار کرلیا۔

ڈسٹرک پولیس افسر ایبٹ آباد، عباس مجید مروت نے گرفتاری کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ ’کوہستان کے ضلع پلاس میں ایک چھاپے کے دوران گرفتاری عمل میں آئی‘۔

یہ بھی پڑھیں:   کالعدم تنظیموں سے تعلق رکھنے والے وفاقی کابینہ میں موجود تین وزراء4 کو فارغ کرے، بلاول بھٹو زرداری

عباس مروت نے ڈان سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ’پلاس کے نواحی علاقے سے گرفتار کیے جانے والے شخص کی شناخت معصوم خان کے نام سے ہوئی۔

ان کا کہنا تھا کہ مذکورہ گرفتاری ابتدائی تحقیقات کے نتیجے میں عمل میں آئی، اس کے علاوہ ملزم معصوم خان سے ہتھیار بھی برآمد ہوئے، جبکہ ملزم کا جسمانی ریمانڈ حاصل کرنے کے لیے اسے جوڈیشل میجسٹریٹ کے سامنے پیش کیا جائےگا۔

یہ بھی پڑھیں:   افضل کوہستانی کی قتل سے پہلے کی ویڈیو سامنے آ گئی، وزیراعلیٰ خیبرپختونخواہ نے قتل کا نوٹس لے لیا

واضح رہے کہ افضل کوہستانی کے قتل کے مقدمے میں ان کے بھتیجے فیض الرحمٰن کو گرفتار کیا گیا تھا، ڈسٹرک پولیس افسر (ڈی پی او) کے مطابق گرفتار ملزم کا بیان ریکارڈ کرنے کے لیے اسے جوڈیشل میجسٹریٹ کے سامنے پیش کیا جاچکا ہے۔

خیال رہے کہ افضل کوہستانی کو گزشتہ رات 8 بجکر 10 منٹ پر ابیٹ آباد کے سربان چوک پر نامعلوم افراد نے فائرنگ کرکے قتل کردیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں:   وزیر خارجہ کا ایران حملے میں ہلاکتوں پر افسوس کا اظہار، تحقیقات میں مکمل تعاون کی یقین دہانی