پی آئی اے کی جانب سے ملازمین کی برطرفی پر وضاحت طلب

اسلام آباد (زرائع) سینیٹ کمیٹی نے اٹارنی جنرل کے بھیجے گئے اس خط پر اعتراض کردیا، جس میں پاکستان انٹرنیشنل ایئر لائن (پی آئی اے) کی جانب سے جعلی ڈگری رکھنے والے ملازمین کو برطرف کرنے کے معاملے سے دور رہنے کا کہا گیا تھا۔

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے ہوا بازی کے سربراہ اور مسلم لیگ (ن) کے سینیٹر مشاہد اللہ کا کہنا تھا کہ ’مجھے سمجھ نہیں آرہی کہ موجودہ حکومت پی آئی اے کے ملازمین کی مدد کیوں نہیں کرنا چاہتی‘۔

یہ بھی پڑھیں:   پی آئی اے کا بوئنگ 777 طیارہ بڑے حادثے سے بال بال بچ گیا

واضح رہے کہ سینیٹ کمیٹی کا اجلاس پی آئی اے کی جانب سے ملازمت کے لیے جعلی دستاویزات جمع کروانے والے 70 سے زائد کیبن کریو، 7 پائلٹس اور دیگر کم عہدے کے ملازمین کی برطرفی پر وضاحت طلب کرنے کے لیے منعقد ہوا۔