حکومت نے نئے گھر کی تعمیر کے لیے نئی شرط رکھ دی

لاہور (وائس آف ایشیا)ہر گھر میں ایک درخت لگایا جائے گا۔پنجاب حکومت نے نئے گھر کی تعمیر کا این او سی شجرکاری سے مشروط کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔اس حوالہ سے قومی اخبار کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ صوبائی وزیر ہاسنگ محمود الرشید نے رائیونڈ روڈ اڈہ پلاٹ پر پودا لگا کر رنگ روڈ گرین کوریڈور منصوبے کا افتتاح کیا۔

اس موقع پر صوبائی وزیر محمود الرشید نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ شجرکاری کو فروغ دینے کے لیے ایل ڈی اے کو اس امر کا پابند کر رہے ہیں کہ گھروں میں درخت لگانے والوں کو ہی این او سی جاری کیے جائیں گے۔ہاؤسنگ سکیم 10 مرلے کے گھر میں دو درخت جبکہ ایک کنال کے گھر میں میں تین درخت لگائے جائیں گے۔

یہ بھی پڑھیں:   مشال خان قتل کیس: انسداد دہشتگردی عدالت نے 2 ملزمان کو عمر قید کی سزا سنادی، 2 ملزمان کو بری کر دیا

چیئرمین پی ایچ اے کا کہنا ہے کہ درخت لگانے کے لئے 11 انکلیو بنائے گئے ہیں اور کم از کم چھ فٹ کے درخت لگائے جائیں گے۔واضح رہے وزیراعظم عمران خان نے دنیا کے سب سے بڑے شجرکاری منصوبے کا اعلان کیا تھا ،جس کے تحت خیبرپختونخواہ کے بلین ٹری سونامی منصوبے کی طرز پر ملک بھر میں 10 ارب کے قریب درخت لگائے جائیں گے۔

یہ بھی پڑھیں:   بھارت کو پلوامہ حملے میں تحقیقات اور دوطرفہ مسائل پر مذاکرات کی پیشکش، عمران خان کے بیان نے پوری قوم کا دل خوش کردیا

وزیراعظم عمران خان نے ملک بھر میں اربوں درخت لگانے کا اعلان کیا۔ قوم سے اپنے پہلے خطاب میں انہوں نے کہا کہ پورے پاکستان میں درخت لگانے کی مہم چلانی ہے، شہروں میں بھی درخت لگائے جائیں گے، نوجوانوں کو ساتھ ملا کر پاکستان کو ہرا بھرا بنائیں گے۔ اس حوالے سے وزیراعظم عمران خان صرف اپنے اعلان تک محدود نہیں رہے ہیں۔

وزیراعظم عمران خان نے اس منصوبے کی باگ دوڑ اپنے دیرینہ دوست اور خیبرپختونخواہ بلین ٹری سونامی پراجیکٹ کا مرکزی خیال پیش کرنے والے ماہر ماحولیات ملک امین اسلم کو سونپنے کا فیصلہ کیا تھا۔ وزیراعظم عمران خان کی جانب سے اعلان کردیا منصوبہ ممکنہ طور پر دنیا کے کسی بھی ملک کی جانب سے اعلان کردہ سب سے بڑا شجرکاری کا منصوبہ ہوگا۔

یہ بھی پڑھیں:   احتساب عدالت نے علیم خان کے جسمانی ریمانڈ میں 10 روز کی توسیع کردی

وزیراعظم عمران خان کی جانب سے اعلان کردہ شجرکاری منصوبے کے تحت ایک اندازے کے مطابق ملک بھر میں 10 ارب سے زائد درخت لگائے جائیں گے۔