امریکہ نے پاکستان کے لیے ویزا پالیسی میں تبدیلی سے متعلق خبروں کی تردید کردی

اسلام آباد (آن لائن)امریکہ نے پاکستان کے لیے ویزا پالیسی میں تبدیلی سے متعلق خبروں کی تردید کردی اور گذشتہ روز جاری ہوئے بیان کی وضاحت بھی کر دی گئی ۔ تفصیلات کے مطابق امریکی سفارتخانے کے ترجمان کا کہنا ہے کہ پاکستان کے لیے ویزا پالیسی تبدیل نہیں ہوئی، صرف کچھ کیٹیگریز میں مدت کو پاکستانی ویزا کی مدت کے مطابق ڈھالا ہے۔

مدت کی یہ تبدیلی اس سال جنوری میں کی گئی تھی، جس کے تحت دونوں ممالک اب ایک دوسرے کے صحافیوں کو صرف تین ماہ کا ویزا دیتے ہیں۔ ترجمان نے مزید کہا کہ صحافیوں، عارضی مدت کے لیے کام کرنے والوں کے لیے ویزا پالیسی میں تبدیلی کی گئی،ان کیٹیگریز میں پاکستان بھی اسی مدت کا ویزا دیتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   اصغر خان عمل درآمد کیس سماعت کے لئے مقرر

یاد رہے کہ گذشتہ روز یہ خبر موصول ہوئی تھی کہ امریکہ نے پاکستانی صحافیوں کے لیے نئی ویزا پالیسی جاری کر دی۔امریکی سفارتخانے کی جانب سے جاری بیان میں بتایا گیا تھا کہ امریکہ نے پاکستانی صحافیوں کے لیے نئی ویزا پالیسی جاری کر دی ۔ نئی ویزا پالیسی کے تحت امریکہ پاکستانی صحافیوں کو 3 ماہ کا ویزا دے گا ۔

یہ بھی پڑھیں:   ایشیا کپ کرکٹ ٹورنامنٹ 2020 کی میزبانی پاکستان کو مل گئی

امریکہ نے پاکستانی صحافیوں کے لیے جاری کردہ نئی ویزا پالیسی کے تحت ویزے کی مدت پانچ سال سے کم کر کے تین ماہ کر دی ہے جبکہ سرکاری حکام کو ویزا کام کی مدت کو مدنظر رکھ کر جاری کیا جائے گا۔واضح رہے کہ پاکستان پہلے ہی امریکی شہریوں کے لیے ویزا مدت میں کمی جیسے اقدامات کر چکا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   امریکی شہ پرہونے والی فوجی بغاوت ناکام

امریکی سفارتخانے کی جانب سے اس بیان کے بعد کئی جگہ یہ کنفیوژن پائی گئی کہ آخر یہ ویزا پالیسی کس پر لاگو ہو گی اور اس کی کیا تفصیلات ہیں جس پر آج وضاحتی بیان جاری کر دیا گیا ہے جس کے تحت بتایا گیا ہے کہ یہ ویزا پالیسی صحافیوں اور عارضی مدت کے لیے کام کرنے والوں کے لیے ہے۔