نئی دہلی کو دنیا کا آلودہ ترین شہر قرار دے دیا

نئی دہلی (زرائع) ماحول کی نگرانی کرنے والی 2 بین الاقوامی تنظیموں نے بھارتی دارالحکومت نئی دہلی کو دنیا کا آلودہ ترین شہر قرار دے دیا۔

بین الاقوامی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق یہ بات فضا میں موجود مادے کے ذرات یا پی ایم 2.5 کے حوالے سے دنیا کے 61 دارالحکومتوں پر کی گئی تحقیق میں سامنے آئی۔

یہ بھی پڑھیں:   افغان طالبان کا امریکا کے ساتھ مذاکرات کے لئے 14 رکنی نئی ٹیم کا اعلان

سوئٹزرلینڈ سے تعلق رکھنے والے ایک ادارے آئی کیو ایئر ویژوول کی تحقیق کے مطابق بھارتی دارالحکومت میں 2 کروڑ افراد مقیم ہیں جس کے بعد بنگلہ دیش کے دارالحکومت ڈھاکہ اور افغانستان کے دارالحکومت کابل کا نمبر آتا ہے۔

تحقیق کے مطابق نئی دہلی کی فضا گاڑیوں اور کارخانوں کے اخراج، تعمیرات سے پھیلنے والے گرد و غبار، کوڑا کرکٹ اور قرب و جوار میں فصلوں کی باقیات نذرِ آتش کرنے سے اٹھنے والے دھوئیں کے باعث زہریلی ہورہی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   دہشت گردی اور اسکی سرپرستی کرنےوالے ممالک کو نہیں بخشا جائے گا: عادل الجبیر

ماحولیاتی ادارے نے اپنی رپورٹ میں بتایا کہ سال 2018 کے دوران نئی دہلی کی پی ایم 2.5 کی سالانہ اوسطاً کثافت ہوا کے لحاظ سے 113.5 کیوبک میٹر رہی، جو چین کے شہر بیجنگ سے دوگنا زائد ہے جبکہ بیجنگ میں یہ مقدار گزشتہ سال کے دوران 50.9 تھی اور وہ دنیا کے آلودہ ترین شہروں میں آٹھویں نمبر پر موجود ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   پلوامہ حملے کا جواب دیا جائے گا، مودی کی ایک بار پھر ہرزہ سرائی

خیال رہے کہ پی ایم 2.5 یا 2.5 مائیکرومیٹر سے کم کے ذرات بہت خطرناک ہیں کیوں کہ یہ پھیپھڑوں میں سرایت کرجاتے ہیں۔