ہندو برادری سے متعلق متنازعہ بیان، فیاض الحسن چوہان سے استعفیٰ طلب

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)ہندو برادری سے متعلق متنازعہ بیان، پنجاب کے وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان سے استعفیٰ طلب ، نجی ٹی وی کے مطابق وزیر اعلیٰ پنجاب نے ان سے استعفیٰ مانگا ہے ،

واضح رہے کہ اس سے پہلے فیاض الحسن چوہان نے اپنے وضاحتی بیان میں کہا تھا کہ انہوں نے اپنے خطاب کے دوران پاکستان میں موجود ہندو برادری کو مخاطب نہیں کیا بلکہ ان کا مخاطب نریندر مودی، بھارتی افواج اور انڈین میڈیا تھا۔اگر دل آزاری ہوئیتو وہ معذرت خواہ ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:   حکومت نے اب ایسے ہر گھر کو 25 ہزار روپے ماہانہ دینے کا شاندار اعلان کر دیا

انہوں نے مزید کہا ‘میرا مخاطب قطعی طور پر پاکستانی ہندو کمیونٹی نہیں تھی جو بھی میرے وطن کی طرف میلی آنکھ سے دیکھے گا اس کو منہ توڑ جواب دوں گا۔میرے خون کا آخری قطرہ بھی وطن کے لیے حاضر ہے۔

اس سے پہلے جانب وزیر اعظم عمران خان نے صوبائی وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان کے ہندو کمیونٹی کے خلاف بیان کو نامناسب قرار دیتے ہوئے کہا تھاکہ ایسا نامناسب رویہ ہر گز برداشت نہیں کیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں:   مودی صاحب اپنے پائلٹ کو جہاز اڑانا سیکھا کر بھیجا کریں، بار بار ابھی نندن واپس نہیں کئے جاسکتے، وزیرمملکت برائے پارلیمانی