سپریم کورٹ نے نجی چینلز پر بھارتی مواد نشر کرنے سے روک دیا

اسلام آباد (این این آئی)سپریم کورٹ نے نجی چینلز پر بھارتی مواد نشر کرنے سے روک دیا،عدالت نے بھارتی مواد نشر کرنے کی اجازت کا ہائی کورٹ کا فیصلہ بھی معطل کر دیا ،بھارتی مواد پر پابندی ہٹانے کیخلاف پیمرا کی اپیل سماعت کیلئے منظورکرلی گئی ،اس موقع پر سپریم کورٹ کے جج جسٹس گلزاراحمد نے کہاکہ کیا اب بھی آپ لوگ بھارتی مواد دیکھنا چاہتے ہیں؟ جس پر وکیل پیمرا نے کہاکہ 2006 میں بھارت 10 فیصد غیر ملکی موادنشر کرنے کی پالیسی آئی، بھارتی مواد کی نشریات پاکستانی مواد انڈیا میں نشر کرنے سے مشروط تھی، وکیل پیمرا

یہ بھی پڑھیں:   وفاقی وزیر غلام سرور خان کا ایوی ایشن کا چارج سنبھالنے کا اعلان

نے عدالت کو بتایاکہ بھارت میں پاکستانی مواد نشر کرنے کی پابندی ہے، بھارت میں پابندی کے باعث پاکستان میں بھی پابندی عائد کی گئی،اس موقع پر جسٹس اعجاز الاحسن نے ریمارکس دیتے ہوئے کہاکہ ہائی کورٹ کو پیمرا کے اختیارات میں مداخلت کا اختیار نہیں جس کے بعد سماعت غیر معینہ مدت کیلئے ملتوی کر دی گئی۔

یہ بھی پڑھیں:   حامد میر کے دبئی میں فلیٹس ہیں یا نہیں، اس کہانی کے پیچھے اصل حقیقت کیا ہے اور ایف بی آر نے نوٹس کسے بھیجا تھا ؟ سب پتا چل گیا