پی سی بی نے درجنوں کرکٹرز کو بے روز گار کرنے سے متعلق اہم فیصلہ کر لیا

لاہور(ماجد ہنجراء سے )چیئر مین پی سی بی احسان مانی نے وزیراعظم پاکستان عمران خان کی ہدایت کو مد نظر رکھتے ہوئے اراکین پر واضح کردیا کہ محکمہ جاتی ٹیموں کا کوئی مستقبل نہیں جس پر ریجنز کی جانب سے سامنے آنے والے تحفظات کو یکسر نظر انداز کر دیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان کرکٹ بورڈ کے گورننگ بورڈ کا 52 واں اجلاس کی اندرونی کہانی منظر عام پر آگئی جس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ نئے ڈومیسٹک سیزن میں اب 8 ریجنز فرسٹ کلاس کرکٹ کھیلیں گی جس کے مطابق ٹیموں کے ساتھ محکموں کو ملا کر ٹیمیں بنائی گئی ہیں،البتہ ریجنز اور محکموں کے معاملات ابھی طے ہونا باقی ہیں۔نئے قوانین کے مطابق فرسٹ کلاس سیزن کا آدھا خرچ محکمے اور آدھا بورڈ ادا کرے گا، انتظامی امور کی انجام دہی ابھی طے نہیں ہو سکی البتہ نئے فارمولے کے مطابق محکموں کو درجنوں کرکٹرز کو فارغ کرنا پڑے گا جو ماہانہ تنخواہ لے کر ان کی طرف سے فرسٹ کلاس سیزن کھیلا کرتے تھے۔

یہ بھی پڑھیں:   ایشیا کپ کرکٹ ٹورنامنٹ 2020 کی میزبانی پاکستان کو مل گئی

نئے فرسٹ کلاس سیزن میں ابتدائی معلومات کے مطابق ریجنز کے کھلاڑیوں کو سلیکشن میں اہمیت دی جائے گی۔ جو 8 ریجنز قائداعظم ٹرافی کھیلنے کیلئے منتخب ہوئے ہیں ان میںکراچی حبیب بینک، لاہور سوئی نادرن گیس، ملتان زرعی ترقیاتی بینک، اسلام آباد پی ٹی وی، فیصل آباد نیشنل بینک، راولپنڈی خان ریسرچ لیبارٹریز، پشاور واپڈا اور فاٹا سوئی سدرن گیس کمپنی شامل ہیں ۔

یہ بھی پڑھیں:   جنوبی افریقا کیخلاف 15 رکنی قومی ٹی 20 ٹیم کا اعلان،سرفرازاحمد کپتان برقرار