ود ہولڈنگ ٹیکس کی مد میں 40 ارب روپے کمی کا سامنا ہے، ایف بی آر

Spread the love

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) ایف بی آر حکام کا کہنا ہے کہ ود ہولڈنگ ٹیکس گزشتہ سال کی بہ نسبت 40 ارب روپے کم اکٹھا ہوا جس کے باعث شارٹ فال کا سامنا ہے۔

ایف بی آر کے ممبران لینڈ ریونیو پالیسی حامد عتیق سرور اور ممبر آپریشن سیما شکیل نے ایف بی آر افسران کے ہمراہ میڈیا کو بریفنگ میں بتایا کہ گزشتہ بجٹ میں ریلیف کی وجہ سے ٹیکس اہداف میں کمی کا سامنا تھا، اس کے علاوہ پی ایس ڈی پی میں کمی کی وجہ سے بھی مسائل کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:   وفاقی کابینہ کی کاروباری طبقے اور بیوروکریٹس سے متعلق نیب قوانین پر نظرثانی کی ہدایت

ایف بی آر حکام نے کہا کہ مالی سال کے پہلے 7 ماہ میں 200 بلین روپے کے شارٹ فال کا سامنا ہے، ود ہولڈنگ ٹیکس گزشتہ سال کی نسبت 40 ارب روپے کم اکٹھا ہوا، انکم ٹیکس میں 9 بلین کی کمی ہوئی، پٹرولیم مصنوعات کی امپورٹ پر گزشتہ سال سے 43 ارب کم ٹیکس اکٹھا ہوا اور سیلز ٹیکس کی مد میں گزشتہ سال سے 29 ارب روپے کم اکٹھے ہوئے۔

یہ بھی پڑھیں:   مقبوضہ کشمیر میں ایک کشمیری مجاہد نے 5بھارتی فوجیوں کو بروقت ہلاک کردیا

Related