مالی خسارہ رواں سال کے دوران مجموعی جی ڈی پی کے 6 فیصد تک پہنچنے کا امکان

کراچی (زرائع) حکومت کے پیش کردہ منی بجٹ میں اخراجات میں کمی اور آمدنی میں اضافہ کرنے میں ناکامی کے باعث ملک کا مالی خسارہ رواں سال کے دوران مجموعی ملکی پیداوار (جی ڈی پی) کے 6 فیصد تک پہنچنے کا امکان ہے۔

عالمی مالیاتی کریڈٹ ریٹنگ ایجنسی موڈیز انویسٹرز سروس کے مطابق منی بجٹ میں ملک کے پیداواری شعبے کی ترقی کے لیے برآمدات میں اضافہ کرنے کا اعلان تو کیا گیا لیکن ملکی خسارہ 5.1 فیصد کا ہدف پانے کے لیے آمدنی میں اضافے کے اقدامات کو نظر انداز کردیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں:   صدر مملکت کی جانب سے استعفیٰ منظور، سابق وفاقی وزیر خزانہ کا پیغام جاری

ریٹنگ ایجنسی کے مطابق آمدنی کم رہنے کے باعث ملکی خسارہ 6 فیصد تک پہنچنے کی توقع ہے جو اس سے قبل بہتر معاشی نمو اور آمدنی بڑھانے کے اقدامات کے باعث 5 فیصد تک ہونے کا امکان ظاہر کیا گیا تھا۔

Related

اپنا تبصرہ بھیجیں