وزیراعظم عمران خان میں منہ پر بات کرنے کی ہمت نہیں، بلاول بھٹو

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) پیپلز پارٹی کے چیرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ پارلیمانی فیصلوں کو ایک یا دو غیر منتخب افراد ختم کردیتے ہیں اور سپریم کورٹ نے اسپتالوں کو سندھ سے چھینا تو عوام کو سمجھانا مشکل ہوگا۔ بلاول بھٹو زرداری نے قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے ای سی ایل سے متعلق بیان پر وزیراعظم عمران خان کو تنقید کا نشانہ بنایا۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نے پارلیمانی کارروائی اور ای سی ایل پر ٹویٹ کیا، اچھا ہوتا کہ وہ ایوان میں آ کر بات کرتے، وہ منہ پر بات کرتے تو میں ان کے منہ پر جواب دیتا لیکن ان میں منہ پر بات کرنے کی ہمت نہیں ہے، ای سی ایل میں نام ہونے نہ ہونے سے کوئی فرق نہیں پڑتا، اگر کابینہ نے نام ہٹایا تو مجھ پر کوئی احسان نہیں کریں گے، سپریم کورٹ نے میرا نام ای سی ایل اور جے آئی ٹی رپورٹ سے نکالنے کا حکم دیا ہے۔ بلاول بھٹو نے سپریم کورٹ میں 18 وہیں ترمیم آئینی اختیارات کیس میں سندھ کی اپیل کی مسترد ہونے اور جناح اسپتال، این آئی سی ایچ، این آئی سی وی ڈی کو وفاق کے حوالے کرنے کے حکم کے بارے میں بھی اظہار خیال کیا۔ انہوں نے کہا کہ پہلے یہ ادارے چندے پر چلتے تھے لیکن سندھ کو ملنے کے بعد ان کا شمار دنیا کے بڑے مفت اسپتالوں میں ہوتا ہے

یہ بھی پڑھیں:   40 بریگیڈئیرز کی میجر جنرل کے عہدے پر ترقی کی منظوری

Related

اپنا تبصرہ بھیجیں