صدر انجمن تاجران شو رکوٹ کی جانب سے سرکاری اسکول ٹیچر پر جعل سازی کا الزام

شورکوٹ (اکمل ملک سے ) صدر انجمن تاجران محمد یوسف جھنگوی ،کونسلر میونسپل کمیٹی شورکوٹ محمد عاشق ولی ایڈووکیٹ اور کونسلر میونسپل کمیٹی شورکوٹ حاجی طالب حسین نے پر یس کانفر نس کر تے ہوئے الزام لگایا کہ محکمہ تعلیم کے سرکاری سکول ٹیچر حافظ محمد علی نے محکمہ تعلیم میں بوگس سر وس بک بنا کر نوکری کی ساتھ ہی 1997ء سے وکالت کالائسنس حاصل کیے رکھا ہے اور شہر میں منفی سر گر میوں میں شامل رہا ہے انہوں نے کہا کہ محمد علی ایک سر کاری سکول ٹیچر ہو کر کروڑوں کی جائیداد کا مالک بن گیا جبکہ ضلعی افسر تعلیم کی طرف سے کی گئی انکوائر ی رپوٹ میں بھی حافظ محمد علی نے اپنی بوگس سر وس بک پر محکمہ تعلیم میں سروس کا اعتراف کیا اس نے تمام سروس جعل سازی کر کے بنائی گئی بوگس سر وس بک پر گزاری اور بغیر محکمانہ منظوری کے وکلالت کا لائسنس حاصل کیا محکمہ تعلیم نے اپنی انکوائری کے بعد حافظ محمد علی کو بھاری جر مانہ بھی کیا اور ماہانہ کی بنیاد پر پینش میں کٹوتی کی منظوری بھی دی ہے انہوں نے چیف جسٹس پا کستان ،وزیر اعظم پاکستان ،وزیر اعلیٰ پنجاب وزیر تعلیم ،کمشنر فیصل آباد ، ڈپٹی کمشنر جھنگ اور اینٹی کرپشن فیصل آباد سے محمد علی کے خلاف بوگس سر وس بک پر سروس کر نے اور محکمہ تعلیم کو نقصان پہنچانے اور سر وس بک میں جعل سازی کر نے پر محمد علی کے خلاف ایف آئی آر درج کر کے سخت قانی کاروائی کر نے کا مطالبہ کیا ہے انہوں نے کہا کہ جعل سازی کر جعلی سر وس بک پر نوکر ی نے والے سکول ٹیچر محمد علی کوفوری طور پر میونسپل کمیٹی کی مسجدمیں امامت سے ہٹایا جائے اور اسلامی شر یعت کے مطابق مناسب امام مسجدکو تعینات کیا جائے

یہ بھی پڑھیں:   آدم جی گورئمنٹ سائنس کالج میں تقریب تقسیم گولڈ میڈلز

Related

اپنا تبصرہ بھیجیں