اگر اپوزیشن نے عمران خان کی حکومت گرا دی تو تحریک انصاف کو فائدہ ہوگا : رؤف کلاسرا

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) سینئر صحافی رؤف کلاسرا کا کہنا ہے کہ آصف زرداری کو یہی بات سوٹ کرتی ہے کہ وہ سندھ میں رہیں گے ، یہ کہتے رہیں، ہم نے کہی نہیں جانا ، جو آئے جتنا آئے وہ اس کے لے کر کھا رہے ہیں، لیکن نواز شریف اور آصف زرداری کویہ سوٹ نہیں کرے گا کہ وہ عمران خان کی حکومت کو گرائیں ، ااگر نمبر گیم کے حوالے سے عمران خان کے پاس تعداد کم ہے تو اپوزیشن کے پاس کونسا پوری ہے۔ تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے سینئر صحافی رؤف کلاسرا کا کہنا تھا کہ ) سینئر صحافی رؤف کلاسرا کا کہنا ہے کہ آصف زرداری کو یہی بات سوٹ کرتی ہے کہ وہ سندھ میں رہیں گے ، یہ کہتے رہیں، ہم نے کہی نہیں جانا ، جو آئے جتنا آئے وہ اس کے لے کر کھا رہے ہیں، لیکن نواز شریف اور آصف زرداری کو یہ سوٹ نہیں کرے گا کہ وہ عمران خان کی حکومت کو گرائیں، یہاں مسئلہ نمبر گیم کا نہیں بلکہ عمران خان کی اپنی حماقتوں کا ہے ۔
رؤف کلاسرا کا کہنا تھا کہ عمران خان اس وقت اپنی سیاسی حماقتوں اور نا تجربہ کاری کی وجہ سے ہی انکا سیاسی گراف نیچے جاتا جا رہا ہے ، جس تیزی سے وہ غیر مقبول ہو رہے ہیں ان کے لیے یہ ایک نعمت ہو گی اگر اپوزیشن جماعتیں مل کر عمران خان کی حکومت کو گرا دیں، ایسے میں عمران خان یہ نعرہ لے کر قوم کے پاس جا سکیں گے کہ مجھے تو پانچ ماہ تک نہیں ملے، زرداری نے پانچ سال حکومت کی، دس سال سے سندھ میں بیٹھے ہیں، نواز شریف تین مرتبہ وزیراعظم بنے ، ان کو تین تین، چار چار باریاں ملی ہیں لیکن مجھے ایک باری بھی نہیں ملی۔ رؤف کلاسرا کا کہنا تھا کہ جتنا مشکل وقت اس عمران خان کی حکومت پر ہے اتنا تاریخ میں کبھی کسی حکومت پر نہیں آیا ۔

یہ بھی پڑھیں:   جے آئی ٹی کے سربراہ کے ایمان کا امتحان ، خلیل کے بچے ٹی وی سکرین پر آتے ہیں تو آنکھ ملانے کی ہمت نہیں ہوتی :ذوالفقار چیمہ

Related

اپنا تبصرہ بھیجیں